Advertisement

عمران خان نے عثمان بزدار کو ہی وزیر اعلیٰ پنجاب کیو ں بنا یا ؟اصل وجہ سامنے آگئی

Advertisements

 سینئیر تجزیہ نگار اور صحافی مظہر عباس کا کہنا ہے کہ پاکستان تحریک انصاف کے اندر کئی گروپس ہیں۔عمران خان اپنے اتحادیوں کو زیادہ دیر ناراض رکھ کر نہیں چل سکتے۔انہوں نے کہا کہ عمران خان نے اپنے اتحادیوں کے ساتھ تحریری معاہدے کیے ہوئے ہیں۔عمران خان نے تحریک انصاف کی اندرونی لڑائی سے بچنے کے لیے عثمان بزدار کو پنجاب میں جب کہ محمود خان کو کے پی کے میں وزیر اعلیٰ بنایا۔تحریک انصاف کے اندر وزرات اعلیٰ کے کئی امیدوار تھے۔واضح رہے عثمان بزدار کو وزیر اعلیٰ بنانے پر عمران خان کو بہت زیادہ تنقید

کا سامنا کرنا پڑا۔بعض لوگوں کا کہنا ہے کہ عثمان بزدار کو وزیراعظم عمران خان کی اہلیہ کے استخارہ کرنے پر وزیر اعلیٰ بنایا گیا۔حکومت کو بنے 6 ماہ ہو گئے ہیں تاہم عثمان بزدار کو عہدے سے ہٹانے کی خبریں ابھی بھی سرگرم ہیں۔اس حوالے سے معروف صحافی محمد مالک کا کہنا ہے کہ وزیراعظم عمران خان جن کی باتیں سنتے ہیں ان کا کہنا ہے کہ عثمان بزدار کو وزارت اعلیٰ سے ہٹایا نہیں جائے گا بلکہ وہ خود مستعفیٰ ہو جائیں گے۔پروگرام کے دوران گفتگو کرتے ہوئے محمد مالک کا کہنا تھا کہ عثمان بزدار سے عہدہ لینے کے لیے جو طریقہ کار اپنایا جائے گا وہ یہ ہے کہ عثمان بزدار کو ہٹایا نہیں جائے گا بلکہ وہ خود مستعفیٰ ہو جائیں گے۔عثمان بزدار یہ کہتے ہوئے مستعفیٰ ہو جائیں گے کہ میں اس لیے استعفیٰ دے رہا ہوں کیونکہ میرے قائد کے اوپر بہت پریشر ہے اور پارٹی کے اندر بھی بہت ایشوز ہیں اور میں نہیں چاہتا کہ میرے لیڈر شرمندہ ہوں اس لیے میں ان کے لیے، صوبے کے لیے اور پاکستانکے لیے استعفیٰ دے دوں گا۔محمد مالک نے کہا کہ یہ تاثر غلط ہے کہ میڈیا وزیراعلیٰ پر اس لیے تنقید کر رہا ہے

کہ ان کا تعلق جنوبی پنجاب سے ہے،اگر پنجاب ملک ہوتا تو آبادی کے لحاظ سےدنیا کا 12واں بڑا ملک ہوتا اس لیے اس کے انتظامی امور چلانے کے لیے ایک منجھا ہوا ایڈمنسٹریٹر چاہئیے۔واضح رہے وزیر اعلیٰ عثمان بزدار کے بارے میں اکثر کہا جاتا ہے کہ وہ اتنا بڑا صوبہ سنبھالنے کے اہل نہیں ہیں کیونکہ ان میں خود اعتمادی کی کمی ہے۔ اور پنجاب جیسے صوبے کو سنھبالنے کے لیے کسی تجربہ کار آدمی کی ضرورت ہے۔تاہم وزیراعظم عمران خان نے کئی بار واضح طور پر کہا کہ کچھ بھی ہو جائے عثمان بزدارہی وزیراعلیٰ پنجاب رہیں گے ۔عمران خان ہر موقع پر عثمان بزدار کا دفاع کرتے ہوئے نظر آئے یہاں تک کہ انہوں نے عثمان بزدار کو وسیم اکرم پلس اور تبدیلی کی علامت قرار دے دیا۔تاہم وزیر ہاؤسنگ پنجاب محمودالرشید کا کہنا ہے کہ عثمان بزدار کو بطور وزیر اعلیٰ تبدیل کرنے کا کوئی چانس نہیں ہے۔

Advertisement

Source DailyAusaf
x

We use cookies to give you the best online experience. By agreeing you accept the use of cookies in accordance with our cookie policy.

I accept I decline Privacy Center Privacy Settings