Advertisement

نبی کریم ﷺ کی ایک سنت دانتوں میں خلال سے جسم میں کون سی انتہائی حیران کن تبدیلی واقع ہوتی ہے

Advertisements

خلال کرنا سنت نبوی ہے اور اس پر عمل کرنا آپ کو متعدد جان لیوا امراض سے بچا سکتا ہے۔یہ بات امریکا میں ہونے والی ایک طبی تحقیق میں سامنے آئی۔تحقیق کے مطابق یہ تو پہلے ہی ثابت ہوچکا ہے کہ مسوڑوں کے امراض ذیابیطس، امراض قلب، خون کی شریانوں کے مسائل یا جوڑوں کے درد کا خطرہ بڑھاتے ہیں۔ تاہم خلال کرنےکو عادت بنالینا صحت مند زندگی گزارنے میں بڑی مدد دے سکتا ہے۔اس تحقیق میں مزید بتایا گیا کہ خلال کرنا منہ کے اندر جرثوموں کی مقدار کم کرتا ہے

اور منہ میں سوجن کا امکان بھی ہوجاتا ہے۔محققین کا کہنا تھا کہ جب مسوڑوں میں سوجن نہیں ہوگی تو ان سے خون نکلنے کا امکان بھی کم ہوگا۔ انہوں نے مزید کہا کہ منہ کی صحت برقرار رکھنا بیکٹریا کو دوران خون میں جانے سے روکتا ہے اور اس طرح متعدد جان لیوا امراض سے تحفظ ملتا ہے۔اسی طرح خلال نہ کرنا سانس میں بو کا امکان بڑھاتا ہے کیونکہ غذا کے ذرات دانتوں کے درمیان پھنس کر سانس میں بو بڑھانے والے بیکٹریا کی تعداد بڑھاتے ہیں۔ اس سے پہلے امریکن ڈینٹل ایسوسی ایشن نے بھی اپنی ایک تحقیق میں بتایا تھا کہ درمیانی عمر میں لوگوں کو دانتوں کے مسائل کا سامنا اس لیے ہوتا ہے کیونکہ وہ خلال نہیں کرتے۔امریکن ڈینٹل ایسوسی ایشن کے مطابق دن میں کم از کم ایک دانتوں کا خلال کرنے سے دانتوں کے اس درمیانی خلاءمیں بیکٹریا کو ہٹانے میں مدد ملتی ہے جہاں ٹوتھ برش پہنچ نہیں پاتا۔دوسری صورت میں مسوڑوں کے امراض اور کیڑے لگنے کا خطرہ بڑھ جاتا ہے

سردی ہو یا گرمی گردن کے پچھلے حصے پر چند منٹوں کیلئے برف کا ٹکڑا رکھیں

چین میں گزشتہ دو ہزار سال سے مختلف بیماریوں کے علاج کے لیے ’فینگ فو پوائنٹ‘ پر برف کا استعمال کیا جارہا ہے جس سے اب تک دنیا بھر کے ان گنت لوگ مستفید ہوچکے ہیں۔علاج کا یہ طریقہ بہت آسان ہے جس میں گردن کے پچھلے حصے پر برف کا ایک ٹکڑا چند منٹوں کے لیے رکھا جاتا ہے جب کہ یہ عمل پورے دن میں ایک سے دو مرتبہ دوہرایا جاتا ہے۔واضح رہے

کہ وہ جگہ جہاں ریڑھ کی ہڈی کا سب سے اوپر والا مہرہ اور کھوپڑی کا نچلا حصہ آپس میں ملتے ہیں اسے فینگ فو پوائنٹ کہتے ہیں اور برف کا ٹکڑا اسی حصے پر 20 منٹ تک رکھنا پڑتا ہے۔اس طریقے پر عمل کرنے کے لیے بیٹھ کر گردن جھکالیں یا پھر سینے کے بل لیٹ جائیں۔ہاتھ میں رومال یا کوئی موٹا کپڑا لے کر اس سے برف کا ٹکڑا پکڑ لیں تاکہ اسے دیر تک فینگ فو پوائنٹ پر رکھ سکیں۔پہلے 30 سے 60 سیکنڈ تک برف کی ٹھنڈک سے تکلیف کا احساس ہوگا لیکن اس کے بعد حیرت انگیز طور پر آپ کو گرمی کی لہریں اپنی گردن کے پچھلے حصے میں اترتی ہوئی محسوس ہونے لگیں گی۔20 منٹ تک برف کا ٹکڑا اسی جگہ پر تھام کر رکھیں جسے زیادہ دبانے یا ہٹانے کی ضرورت نہیں، البتہ اتنا ضرور دھیان رہے کہ برف آپ کی گردن کے پچھلے بالائی حصے سے مسلسل مس ہوتی رہے ۔اس عمل سے سر کے درد ،نزلہ زکام کی علامات ،الٹی/ متلی کی کیفیات،سر چکرانے کے خاتمے ،یرقان کی ظاہری علامات میں کمی آتی ہے ، دل اور دورانِ خون اور نظامِ ہاضمہ میں بہتری کے علاوہ اچھی نیندممکن ہے ۔

Advertisement

Source DailyAusaf
x

We use cookies to give you the best online experience. By agreeing you accept the use of cookies in accordance with our cookie policy.

I accept I decline Privacy Center Privacy Settings