Advertisement

تحریک انصاف حکومت نے سگریٹ کی ڈبیہ پر ’’گناہ ‘‘ ٹیکس عائد کر دیا ۔۔ فی ڈبی کتنےروپے اضافہ؟ جان کر آپ بھی کہیں گے کہ ’’بھیا جی اب تو سگریٹ چھوڑنی ہی پڑے گی ‘‘

Advertisements

تحریک انصاف حکومت نے سگریٹ کی ڈبیہ پر ’’گناہ ‘‘ ٹیکس عائد کر دیا ۔۔ فی ڈبی کتنےروپے اضافہ؟ جان کر آپ بھی کہیں گے کہ ’’بھیا جی اب تو سگریٹ چھوڑنی ہی پڑے گی ‘‘۔۔ پاکستان تحریک انصاف نے سگریٹ نوشی کے عادی افراد پر بھی ٹیکس عائد کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ تفصیلات کے مطابق حکومت نے سگریٹ پینے والوں پر گناہ ٹیکس عائد کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ گناہ ٹیکس سےجمع شدہ آمدن شعبہ صحت پر خرچ کی جائے گی۔ گناہ ٹیکس کے نفاذ سے سگریٹ مزید مہنگی ہونے کا امکان ظاہر کیا جا رہا ہے ۔گناہ ٹیکس آمدن

وزیراعظم ہیلتھ پروگرام کے تحت استعمال ہو گی۔ وزارت صحت گناہ ٹیکس کے حوالے سے مختلف آپشنز پر غور کر رہی ہے۔فی سگریٹ پیکٹ پر 5 تا 15 روپے ٹیکس عائد کرنے پر بھی غور کیا جا رہا ہے۔ذرائع کے مطابق اس گناہ ٹیکس کے نفاذ سے سالانہ اربوں روپے کی آمدن متوقع ہے۔ پاکستان سگریٹ پر گناہ ٹیکس کا نفاذ کرنے والا دوسرا ملک ہو گا۔ واضح رہے کہ فلپائن سگریٹ پر گناہ ٹیکس عائد کرنے والا دنیا کا پہلا ملک ہے۔
دوسری طرف
وزیر اعظم عمران خان کہتے ہیں کہ میں پاکستانی قوم کو یقین دلانا چاہتا ہوں کہ ملک میں ڈالروں کی کمی نہیں ہوگی ۔ صحافیوں کودیے گئے اپنے انٹرویو کے دوران عمران خان کا کہنا تھا کہ پاکستان میں گیس کے بے پناہ ذخائر موجود ہیں،ایگزون کمپنی27 سال بعد گیس نکالنے آرہی ہے،اتنی گیس ہے کہ50 سال تک کمی نہیں ہوگی، قوم کو بتانا چاہتا ہوں پاکستان میں ڈالروں کی کمی نہیں ہوگی۔ انہوں نے آج سینئر صحافیوں سے خصوصی گفتگو کرتے

ہوئے کہا کہ پچھلی حکومت گئی توملک میں اڑھائی ارب کا خسارہ تھا۔پاورسیکٹر 1200ارب کے خسارے میں تھا۔پی آئی اے اور اسٹیل مل خسارے میں تھی۔ جس طرح موجودہ حکومت کوبحران کا سامنا ہے اس سے قبل کسی حکومت کوبحران کا سامنا نہیں تھا۔انہوں نے ہماری کوشش ہے کہ تاجروں کو سہولیات دیں۔ سرمایہ کاروں کے مسائل کے حل کیلئے ایک دفتربنائیں گے جن کے مسائل کوفوری حل کیا جائے گا۔ہماری کوشش ہے کہ سرمایہ کاروں کیلئے آسانیاں پیدا کریں۔ایف بی آر کا کام ریکوری ہے جبکہ ایف بی آر کا کام پالیسی بنانا نہیں ہے۔انہوں نے ایک سوال پر کہا کہ اسٹیٹ بینک خودمختار ادارہ ہے۔ ڈالر بڑھنے کا علم نہیں تھا مجھے ڈالر میں اضافے کا پتا خبروں سے چلا۔ انہوں نے کہا کہ مستقبل میں اقتصادی اشاریے ٹھیک جارہے ہیں۔ آنے والے دنوں میں حالات ٹھیک ہوجائیں گے۔ اداروں کو ٹھیک کریں گے جس سے ڈالر کو نیچے لیکر آئیں گے۔

Advertisement

x

We use cookies to give you the best online experience. By agreeing you accept the use of cookies in accordance with our cookie policy.

I accept I decline Privacy Center Privacy Settings