Advertisement

دشمنوں کے پیٹ میں بل پڑنے لگے

Advertisements

 پاکستان دن بدن اپنی دفاعی صلاحیتوں میں اضافہ کر رہا ہے تاکہ ملک و قوم کی سکیورٹی کو مزید بہتر بنایا جا سکے۔ اسی کے تحت پاک بحریہ نے رواں سال جنگی جہاز کی بیڑے میں شمولیت کا اعلان کر دیا ہے۔ تفصیلات کے مطابق پاک بحریہ کے جنگی بیڑے میں پہلے جہاز کی شمولیت اس سال کے آخر تک ہوگی، دوسرا 2300 ٹن وزنی کارویٹ جہاز 2020ء میں ملنے کا امکان ہے۔اس حوالے سے ترجمان پاک بحریہ نے کہا کہ درمیانے سائز اور وزن کے کارویٹ جہاز مختلف مقاصد کے لیے استعمال ہوتے ہیں،

کارویٹ کی شمولیت سے پاک بحریہ کی بحری سرحدوں کے دفاع کی صلاحیتوں میں اضافہ ہوگا۔ پاک بحریہ کے لیے بنائے جانے والے 2300 ٹن وزنی جنگی جہاز (کارویٹ) کی رومانیہ میں لانچنگ تقریب ہوئی جس کے مہمان خصوصی پاک بحریہ کے چیف آف سٹاف ( پرسنیل) وائس ایڈمرل عبدالعلیم تھے۔ انہوں نے کہا کہ ان جہازوں کی شمولیت سے بحرہند میں سکیورٹی یقینی بنائی جا سکے گی، ریجنل میری ٹائم سکیورٹی پٹرول کے اقدام کو بھی تقویت ملے گی۔ اس موقع پر مہمان خصوصی وائس ایڈمرل عبدالعلیم نے جہازوں کی تیاری میں ڈامن شپ یارڈ کے تعاون اور پیشہ ورانہ صلاحیتوں کی تعریف کی۔ خیال رہےکہ گذشتہ روز یہ خبر سامنے آئی تھی کہ پاک فضائیہ میں مزید 3 جے ایف 17 تھنڈر بلاک 2 طیارے جون میں شامل ہوں گے۔ جے ایف 17تھنڈر کی شمولیت سے بلاک 2 طیاروں کی کھیپ مکمل ہوجائے گی۔تربیتی امور کے لیے 2 نشستوں والا جے ایف 17تھنڈر (بی) بھی شامل کیا جا رہا ہے۔ائیر چیف کا مزید کہنا ہے کہ جے ایف 17تھنڈر نلاک 2 طیارہ مقامی سطح پر تیار کردہ ہے۔پاکستان ایروناٹیکل کمپلیکس کا شاہکار طیارہ جدید ترین آلات سے لیس ہے۔ جے ایف 17 تھنڈر بلاک 2 جدید ترین کثیر الکردار، مہلک لڑاکا طیارہ ہے۔ پاک فضائیہ نے 2017ء میں مزید 12 جے ایف 17 تھنڈر طیاروں کا آرڈر دیا تھا۔پی اے سی نے 2009ء سے اب تک 10 سال میں 100 جے ایف 17 تھنڈر بنائے۔

Advertisement

Source DailyAusaf

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More

x

We use cookies to give you the best online experience. By agreeing you accept the use of cookies in accordance with our cookie policy.

I accept I decline Privacy Center Privacy Settings