Advertisement

کیا روزے کے دوران خون دیا جاسکتاہے؟سب مسلمان جواب سن کردنگ رہا جا یئں گےجواب جانئے۔ ۔

Advertisements

روزے کی حالت میں خون دینے کے متعلق یہ رائے عام پائی جاتی ہے کہ اس عمل سے روزہ ٹوٹ جاتا ہے۔ دبئی کے گرینڈ مفتی ڈاکٹر علی احمد مشائل کا کہنا ہے کہ اس معاملے میں دوسری رائے بھی پائی جاتی ہے، جس پر علماءکی بڑی تعداد کا اتفاق ہے، کہ روزہ کی حالت میں خون دیا جا سکتا ہے بشرطیکہ خون دینے والا اس قدر کمزوری کا شکار نہ ہو جائے کہ روزہ جاری نہ رکھ پائے۔

ان کا کہنا تھا کہ یہ بات بھی اس رائے کے حق میں جاتی ہے کہ نبی کریم ﷺ کو روزے کی حالت میں علاج معالجے کی خدمات پیش کی گئیں۔ ڈاکٹر علی احمد کا مزید کہنا تھا کہ علماءکی غالب اکثریت کی یہی رائے ہے۔ کیا روزے کے دوران خون دیا جاسکتاہے؟سب مسلمان جواب سن کردنگ رہا جا یئں گےجواب جانئے۔ روزے کی حالت میں خون دینے کے متعلق یہ رائے عام پائی جاتی ہے کہ اس عمل سے روزہ ٹوٹ جاتا ہے۔ دبئی کے گرینڈ مفتی ڈاکٹر علی احمد مشائل کا کہنا ہے کہ اس معاملے میں دوسری رائے بھی پائی جاتی ہے، جس پر علماءکی بڑی تعداد کا اتفاق ہے، کہ روزہ کی حالت میں خون دیا جا سکتا ہے بشرطیکہ خون دینے والا اس قدر کمزوری کا شکار نہ ہو جائے کہ روزہ جاری نہ رکھ پائے۔ ان کا کہنا تھا کہ یہ بات بھی اس رائے کے حق میں جاتی ہے کہ نبی کریم ﷺ کو روزے کی حالت میں علاج معالجے کی خدمات پیش کی گئیں۔ ڈاکٹر علی احمد کا مزید کہنا تھا کہ علماءکی غالب اکثریت کی یہی رائے ہے۔ کیا روزے کے دوران خون دیا جاسکتاہے؟سب مسلمان جواب سن کردنگ رہا جا یئں گےجواب جانئے۔ روزے کی حالت میں خون دینے کے متعلق یہ رائے عام پائی جاتی ہے کہ اس عمل سے روزہ ٹوٹ جاتا ہے۔ دبئی کے گرینڈ مفتی ڈاکٹر علی احمد مشائل کا کہنا ہے کہ اس معاملے میں دوسری رائے بھی پائی جاتی ہے، جس پر علماءکی بڑی تعداد کا اتفاق ہے، کہ روزہ کی حالت میں خون دیا جا سکتا ہے بشرطیکہ خون دینے والا اس قدر کمزوری کا شکار نہ ہو جائے کہ روزہ جاری نہ رکھ پائے۔

Advertisement

Source Dailypakistan.com.pk
x

We use cookies to give you the best online experience. By agreeing you accept the use of cookies in accordance with our cookie policy.

I accept I decline Privacy Center Privacy Settings