Advertisement

”میرا مودی سے سوال یہ ہے کہ پاکستان کے ریڈار ۔۔۔“شاہ محمود قریشی نے بھارتی وزیراعظم کو سیدھی سیدھی سنا دیں

Advertisements

وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہاہے کہ فرض کریں کہ ہمارے ریڈار کام نہیں کر رہے تھے تو ہم نے دو بھارتی جہاز گرا دیئے ، مودی سے سوال یہ ہے کہ ریڈار کام کر رہے ہوتے تو بھارت کے ساتھ کیا ہوتا ؟۔قومی اسمبلی میں کمیٹی کے اجلاس کے دوران خطاب کرتے ہوئے وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہاہے کہ پاک ایران گیس پائپ لائن منصوبے کو آگے لے جانا چاہتے ہیں ، مسئلہ تیسرے فریق کی جانب سے پابندیوں کا ہے ، معاملہ ایران کے ساتھ اٹھا رہے ہیں ، روس پر پابندیاں ہیں ، امریکہ نے چین پر بھی ٹیرف میں اضافہ کر دیاہے جس کے باعث امریکہ اور چین کے درمیان تجارت متاثر ہونے کااندیشہ ہے ۔

وزیر خارجہ کا کہناتھا کہ سعودی ولی عہد محمد بن سلمان نے 2107 پاکستانی قیدیوں کی رہائی پر آمادگی ظاہر کی تھی ، تصدیق کا عمل جاری ہے اور جلد ہی قیدیوں کی رہائی عمل میں آئے گی ،معمولی جرائم ، جرمانہ ادا نہ کرنے پر قید پاکستانیوں کی بات کی گئی تاہم منشیات سمیت سنگین مقدمات کے قیدیوں سے متعلق رعایت طلب نہیں کی گئی ۔ ان کا کہناتھا کہ سعودی عرب میں کچھ قیدی منشیات اور سنگین مقدمات میں ملوث ہیں ۔انہوں ںے کہا کہ لیبر کلاس بیرون ملک سے پیسہ پاکستان بھجوا رہی ہے اور بڑی کلاس تو پیسہ پاکستان سے باہر لے جاتی ہے ۔ انہوں نے بھارتی وزیراعظم نریندر مودی کے بادلوں سے متعلق بیان پر جواب دیتے ہوئے کہا کہ فرض کریں ہمارے ریڈار کام نہیں کر رہے تھے تو دو بھارتی جہاز گرا دیئے ، مودی سے سوال یہ ہے کہ ریڈار کام کر رہے ہوتے تو بھارت کے ساتھ کیا ہوتا؟۔

Advertisement

Source DailyPakistan

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More

x

We use cookies to give you the best online experience. By agreeing you accept the use of cookies in accordance with our cookie policy.

I accept I decline Privacy Center Privacy Settings