Advertisement

منی بجٹ ، سگریٹ پینے والوں کے لیے انتہائی بری خبر، حکومت نے ٹیکس مزید بڑھادیا

Advertisements

وفاقی حکومت کی جانب سے فنانس ترمیمی بل (منی بجٹ) پیش کردیا ہے جس میں مختلف شعبوں میں ٹیکس بڑھائے گئے ہیں جبکہ سگریٹ بھی مہنگے کردیے گئے ہیں۔ وفاقی وزیر خزانہ اسد عمر نے قومی اسمبلی میں منی بجٹ پیش کردیا ہے جس میں گاڑیوں، موبائل فونز پر ٹیکس بڑھادیا ہے۔ اسد عمر نے اپنی بجٹ تقریر میں کہابجٹ میں سگریٹ پر ٹیکسز عائد کرنے کی تجویز ہے جبکہ تمباکو پر بھی ٹیکس بڑھارہے ہیں۔

خیال رہے کہ بجٹ میں سگریٹ اور تمباکو پر ٹیکسز وزارت صحت کی تجویز پر بڑھائے گئے ہیں۔ 5 ستمبر کو وفاقی وزیر صحت عامر محمود کیانی نے وزارت خزانہ کو سگریٹ پر ایکسائز ڈیوٹی کی مد میں متعارف کرائی گئی تیسری سلیب کو ختم کرنے کی تجویز دی تھی کیونکہ اس کی وجہ سے سگریٹ کی پیداوار میں اضافہ ہورہا ہے۔ عامر محمود کیانی نے وزیر خزانہ کو لکھے گئے اپنے خط میں کہا تھا کہ تیسری سلیب متعارف ہونے کے باعث پچھلے سال کی نسبت سگریٹ کی پیداوار میں 77 فیصد اضافہ ہوا ہے۔یاد رہے کہ وزارت صحت نے 2017-18 کے بجٹ سے قبل وزارت خزانہ اور ایف بی آر کو سگریٹ کی نچلی سلیب پر 44 روپے ایف ای ڈی کرنے کی سفارش کی تھی لیکن بجٹ میں ایکسائز ڈیوٹی کی مد میں ایک نئی سلیب متعارف کرتے ہوئے اس پر کم از کم ایف ای ڈی 16 روپے رکھ دی گئی جس کی وجہ سے کچھ سگریٹ برانڈز کی قیمتوں میں کمی ہوئی اور سگریٹ کی کھپت میں اضافہ ہوا۔ وزیر خزانہ مفتاح اسماعیل نے نئے مالی سال کا بجٹ پیش کر دیاہے جس پر اپوزیشن کی جانب سے سخت احتجاج بھی دیکھنے میں آیا ہے تاہم وزیر خزانہ نے نئے بجٹ میں فلم انڈسٹری اور ڈرامہ انڈسٹری کیلئے بڑا قدم اٹھانے کا اعلان کر دیاہے ۔

تفصیلات کے مطابق مفتاح اسماعیل نے بجٹ تقریر میں تجویز پیش کرتے ہوئے کہا کہ مستحق فنکاروں کیلئے مالی مدد کیلئے خصوصی فنڈ بھی قائم کیا جائے گا جبکہ انڈسٹری کی بحالی کے لیے 4 نکاتی پیکج کا اعلان کرتے ہوئے بتایا کہ فلم پرسرمایہ کاری پر 5 سال تک انکم ٹیکس پر 50 فی صد چھوٹ کی تجویز ہے۔

Advertisement

Source DailyPakistan.com.pk
x

We use cookies to give you the best online experience. By agreeing you accept the use of cookies in accordance with our cookie policy.

I accept I decline Privacy Center Privacy Settings