Advertisement

ایران کے خلاف جنگ کی تیاری، امریکہ نے عراق میں اپنے سفارتخانے کے ملازمین کو فوری ملک سے نکلنے کا حکم دے دیا

Advertisements

حالیہ دنوں میں کچھ ایسے واقعات پیش آئے ہیں کہ امریکہ اور ایران کے تعلقات میں کشیدگی اپنے عروج کو پہنچ چکی ہے اور صدر ٹرمپ نے ایران کے ساتھ ممکنہ جنگ کے پیش نظر مزید 1لاکھ 20ہزار فوجی مشرق وسطیٰ میں تعینات کرنے کا حکم دے دیا ہے۔ اس صورتحال کی سنگینی کا اندازہ اس سے بھی ہوتا ہے کہ اب امریکہ نے عراق میں موجود اپنے سفارتخانے کے ملازمین کو فوری طور پر ملک سے نکلنے کا حکم دے دیا ہے۔

دی انڈیپنڈنٹ کے مطابق عراق میں واقع امریکی سفارتخانے کی طرف سے اپنی ویب سائٹ پر ایک الرٹ جاری کیا ہے جس میں اس نے عراق بھر میں موجود اپنے تمام اہلکاروں کو فوری طور پر عراق سے نکل جانے کا حکم دیا ہے۔ اس کے علاوہ انہیں امریکی عمارتوں اور تنصیبات سے بھی دور رہنے کا حکم دیا گیا ہے کیونکہ ان پر حملے کا خدشہ ہے۔دوسری طرف جرمنی اور نیدرلینڈ نے بھی عراق میں جاری اپنے فوجی تربیتی آپریشنز فوری طور پر ختم کر دیئے ہیں۔واضح رہے کہ گزشتہ دنوں متحدہ عرب امارات کی سمندری حدود میں چار بحری جہازوں کو بارودی مواد سے ناکارہ بنا دیا گیا تھا اور امریکہ کی طرف سے اس کا الزام ایران پر لگایا گیا ہے، جس کے بعد دونوں ملکوں میں کشیدگی اپنے عروج کو پہنچ چکی ہے۔

Advertisement

Source DailyPakistan

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More

x

We use cookies to give you the best online experience. By agreeing you accept the use of cookies in accordance with our cookie policy.

I accept I decline Privacy Center Privacy Settings