Advertisement

“سابق کوچ کو یقین نہیں آرہا تھا کہ۔ ۔ ۔ ” واجبات کی ادائیگی کے بعد مکی آرتھرخاموشی کے ساتھ بوریابستر سمیت کر وطن چلے گئے

Advertisements

 پاکستان کرکٹ بورڈ (پی سی بی) کے رویے سے نالاں سابق کوچ مکی آرتھر واجبات کی ادائیگی کے بعد خاموشی کے ساتھ بوریابستر سمیت کر وطن چلے گئے۔روزنامہ ایکسپریس کےمطابق  مکی آرتھر کا معاہدہ 15 اگست تک ہے لیکن معاہدے میں توسیع نہ ہونے پر انہیں گھر کی راہ لینا پڑی۔ ذرائع کے مطابق سابق کوچ کو یقین دلایا گیا تھا کہ ان کی خواہش کے مطابق انہیں مزید ٹیم کے ساتھ ذمہ داریاں نبھانے کا موقع دیا جائے گا لیکن فراغت کا فیصلہ اچانک سنائے جانے پر وہ بورڈ حکام سے ناخوش تھے، چند روز پہلے تک خاصے خوش نظر آنے والے مکی آرتھر آخری روز وہ خاصے بجھے بجھے دکھائی دیئے، نیشنل کرکٹ اکیڈمی میں بھی وہ زیادہ تر وقت فون پر مصروف رہے،

انہوں نے این سی اے سٹاف سے بات چیت سے بھی گریز کیا اور جاتے ہوئے الوداعی ملاقات اور تصاویر بنوانا بھی گوارا نہیں کیا۔ ذرائع کے مطابق سابق کوچ کو یقین نہیں آرہا تھا کہ بورڈ ان کے ساتھ یہ سلوک بھی کرسکتا ہے۔ دوسری جانب گرانٹ فلاور کا معاملہ بھی کچھ ایسا دکھائی دیاہے۔حالاں کہ میڈیا میں یہ بھی رپورٹ ہوا کہ فلاور معاہدہ مکمل ہونے کے بعد مزید کام کرنے کے خواہشمند نہیں، لیکن حقیقت اس کے برعکس تھی، مکی کے ساتھ وہ بھی فارغ کیے جانے پر پی سی بی حکام سے ناراض ہیں۔

Advertisement

Source daily pakistan

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More