Advertisement

’بھارت کے پاس آپشنز ختم ہو رہے ہیں‘ امریکہ نے کشمیر کے معاملے پر بھارت کو خبردار کرتے ہوئے بڑا اعلان کر دیا

Advertisements

امریکہ نے کشمیر کے معاملے پر بھارت کو خبردار کرتے ہوئے کہا ہے کہ بھارت کے پاس آپشنز ختم ہو رہے ہیں۔ امریکی صدر کے مشیر ساجد بشیر تارڑ نے بھارت کی جانب سے امریکی صدر کی ثالثی کی پیشکش کو ایک بار پھر ٹھکرائے جانے پر خبردار کرتے ہوئے کہا ہے کہ بھارت کے پاس آپشنز ختم ہو رہے ہیں، بھارت کو ہٹ دھرمی چھوڑ کر جواب دینا ہو گا۔

ساجد بشیر تارڑ نے اپنے ایک وڈیو بیان میں کہا ہے کہ امریکی صدر ڈانلڈ ٹرمپ مسئلہ کشمیر کو سنجیدگی سے دیکھ رہے ہیں۔ خیال رہے کہ کہ امریکہ کے صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے ایک بار پھر مسئلہ کشمیر پر ثالثی کی پیشکش کی تھی۔ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے اپنے ایک بیان میں کہا کہ مسئلہ کشمیر حل کروانے میں ثالث کا کردار ادا کر سکتا ہوں۔ انہوں نے کہا کہ مسئلہ کشمیر کے حل کا انحصار اب نریندر مودی پر ہے۔

بھارت نے مسئلہ کشمیر پرامریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی جانب سے کی جانے والی ثالثی کی پیشکش ایک مرتبہ پھر سے مسترد کر دی ۔ بھارتی وزیر خارجہ ایس جے شنکر نے مائیکروبلاگنگ ویب سائٹ ٹویٹر پر اپنے پیغام میں کہا کہ مسئلہ کشمیر پر بات صرف پاکستان کےساتھ ہوگی۔ انہوں نے کہا کہ میری امریکی ہم منصب مائیک پومپیو سے بات چیت ہوئی ہے جس پر میں نے انہیں پیغام دے دیا کہ کشمیر کے معاملے پر کوئی بھی بات چیت صرف پاکستان سے ہوگی، یہ دو طرفہ معاملہ ہے، اس معاملے پر کسی کی ثالثی قبول نہیں ہے۔

دوسری جانب بھارت نے بدحواس ہوکر کشمیر میں مزید فوج بھیج دی ہے لیکن اب معاملے میں امریکا شامل ہو گیا ہے اور اب بھارت کوامریکا سمیت عالمی برادری کوجواب دینا ہوگا۔ یاد رہے کہ وزیراعظم عمران خان کے دورہ امریکہ کے موقع پر امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپسے ملاقات ہوئی جس میں امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ مسئلہ کشمیر پر پاکستان اور بھارت کے مابین ثالثی کا کردار ادا کرنے کی پیشکش کی تھی

جسے پاکستان نے خوب سراہا تھا لیکن بھارت میں امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی جانب سے کی جانے والی اس پیشکش پر صف ماتم بچھ گیا تھا۔ بھارت کسی طور بھی مسئلہ کشمیر میں امریکہکے ثالث بننے کی پیشکش کو قبول کرنے پر تیار نہیں ہے

Advertisement

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More