Advertisement

کپتانی سے استعفیٰ دوں گا یا نہیں۔۔۔کپتان سرفرا ز احمد نے وطن واپس آتے ہی اپنے کیرئیر سے متعلق اہم ترین اعلان کردیا

Advertisements

قومی کرکٹ ٹیم کے کپتان سرفراز احمد نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا ہے کہ پہلے 5 میچوں میں ہم نے اچھا نہیں کھیلا اور اس پر شائقین کی تنقید بالکل بجا ہے، بحیثیت ٹیم ہماری کارکردگی پہلے پانچ میچوں میں بری رہی اور بھارت کیخلاف شکست سے کھلاڑی بہت پریشان ہوگئے تھے اور اس میچ کے بعد اگلے 7میچ کھلاڑیوں کے لیے بہت سخت تھے۔

سرفراز احمد نے لندن سے وطن واپسی کے بعد پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا ہے کہ انہوں نے کہا کہ ورلڈکپ 2019 میں ہمارا رن ریٹ بہت گر گیا تھا اور ہم نے اسے بہتر کرنے کی بہت کوشش کی۔ انہوں نے کہا کہ تمام کھلاڑیوں نے اپنی طرف سے اچھا کھیلنے کی کوشش کی ، انہوں نے کہا کہ کوئی بھی مات کھانے کے لیے میدان میں نہیں اترتا اور میں بحیثیت کپتان اپنی کارکردگی سے مطمئن ہوں، انگلینڈ کے خلاف میچ میں فتح کے بعد ورلڈ کپ میں کم بیک کیا اور آخری 4میچوں میں بہترین کم بیک کیا اور اچھا کھیل پیش کیا۔

قومی ٹیم کے کپتان نے کہا کہ ٹیم پی سی بی کے عہدیداران اور میرے مشورے سے بنائی گئی تھی اور کھلاڑیوں کی کارکردگی کے ذمہ دار بھی ہم ہیں۔ سرفراز احمد نے کہا کہ مجھے کپتان بنانے کا فیصلہ پاکستان کرکٹ بورڈ کا تھا اور ہٹانے کا فیصلہ بھی اداراہ ہی کرے گا ۔ انہوں کہا کہ میں خود کپتانی سے استعفیٰ نہیں دوں گا۔ واضح رہے کہ انگلینڈ میں منعقدہ میگا ایونٹ میں پاکستانی ٹیم فائنل فور میں بھی جگہ نہ بنا سکی تھی۔

غیرمعیاری کارکردگی کے بعد قومی کرکٹ میں بڑے پیمانے پر تبدیلیوں کا فیصلہ کر لیا گیا اور سرفراز احمد کو کپتانی سے ہٹانے کا فیصلہ کیے جانے کا امکان ہے جبکہ ان کی جگہ سنبھالنے کیلئے عماد وسیم کے نام پر غور کیا جا رہا ہے تاہم سرفراز احمد نے کہا ہے کہ وہ خود استعفیٰ نہیں دیں گے۔

Advertisement

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More

x

We use cookies to give you the best online experience. By agreeing you accept the use of cookies in accordance with our cookie policy.

I accept I decline Privacy Center Privacy Settings