Advertisement

کیا آرمی چیف جنرل باجوہ کو ایکسٹینشن دیں گے؟ سوال کا وزیر اعظم عمران خان نے انتہائی حیران کن جواب دے دیا

Advertisements

پاکستان میں جب بھی آرمی چیف کی مدت پوری ہونے کو آتی ہے تو یہ بحث بھی چھڑ جاتی ہے کہ آیا انہیں ایکسٹینشن ملے گی یا نیا جرنیل فوج کی کمان سنبھالے گا۔ جنرل راحیل شریف کے وقت بھی یہی موضوع میڈیا پر زیر بحث رہا اور اب جنرل قمر جاوید باجوہ کی ریٹائرمنٹ کی مدت قریب آتے ہی ایک بار پھر یہ بحث شروع ہوچکی ہے جس پر پہلی بار عمران خان کا موقف بھی سامنے آگیا ہے۔

وزیر اعظم عمران خان نے نجی ٹی وی اے آر وائی نیوز کے پروگرام میں اپنی معاشی ٹیم کے ہمراہ شرکت کی جس میںمعیشت کے حوالے سے مختلف معاملات پر گفتگو کی گئی۔ اس دوران وزیر اعظم سے بعض سیاسی سوالات بھی کیے گئے اور آرمی چیف کی مدت ملازمت میں توسیع کے بارے میں بھی سوال پوچھا گیا۔ اینکر پرسن ارشد شریف نے وزیر اعظم عمران خان سے سوال کیا کہ کیا آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ کو ایکسٹینشن دی جائے گی؟ جس پر وزیر اعظم نے کہا کہ ابھی جنرل باجوہ کی ایکسٹینشن کے حوالے سے کوئی ڈسکشن نہیں ہوئی ہے۔

گلوبل فائرپاور کی یہ فہرست مختلف قسم کے 55فیکٹرز کو مدنظررکھ کر مرتب کی جاتی ہے جس میں ٹیکنالوجی میں ایڈوانس اورآبادی میں کم ممالک کا بڑے اور کم ترقی یافتہ ممالک کیساتھ مقابلہ ہوتا ہے ، اسی طرح جرمانے اور بونس بھی شمار ہوتے ہیں جو اس فہرست پر اثراندازہوتے ہیں، اس ریکنگ کا اکیلے انحصار صرف ہتھیاروں کی تعدادیا موجودہ سیاسی وعسکری قیادت پر نہیں، نیوکلیئرہتھیاروں کی تعداد کا بھی انحصار نہیں تاہم ممکنہ ہتھیاروں کی وجہ سے بونس نمبرمل سکتا ہے۔فہرست کو مرتب کے لیے فرسٹ، سیکنڈیا تھرڈ ورلڈ، علاقائی صورتحال ، قدرتی وسائل، معیشت اور انڈسٹری کو دیکھا جاتاہے جبکہ افواج کی مجموعی تعداد بنیادی چیزوں میں سے ایک ہے ، نیٹو کی اتحادی افواج کو ایک اضافی بونس پوائنٹ ملتاہے، فہرست کے مطابق ایک معیاری پاورانڈکس 0.0000ہے ۔

2019ءکی فہرست کے مطابق امریکہ 0.0615پوائنٹس کے ساتھ پہلے نمبر پر اور 0.0639پوائنٹس کے ساتھ روس دوسرے نمبر پر ہے ۔چائنہ 0.0673پوائنٹس کیساتھ تیسرے نمبر پر ہے ۔ اسی فہرست کے مطابق پاکستان 0.2798پوائنٹس کیساتھ پندرہویں نمبر پر ہے ،یادرہے کہ اس سے پہلے پاکستان سترہویں نمبر پر تھا اور اب اس کی ریکنگ میں مزید بہتری آئی ہے ۔ اسی فہرست میں پاکستان کے ہاتھوں اپنے طیارے تباہ کروانے والے بھارت کو0.1065پوائنٹس کیساتھ چوتھا نمبر ملا۔

Advertisement

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More

x

We use cookies to give you the best online experience. By agreeing you accept the use of cookies in accordance with our cookie policy.

I accept I decline Privacy Center Privacy Settings