Advertisement

’جنرل باجوہ‘ نے بچت کا پیسہ کہاں خرچ کرنے کا کہا ہے؟ وزیراعظم نے قومی اسمبلی میں بتا دیا

Advertisements

وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ جنرل باجوہ نے بچت کا پیسا فاٹا اور بلوچستان پر خرچ کرنے کا کہا، تاریخ میں پہلی بارہوا کہ ملک میں دہشتگردی، مشرقی اور مغربی سرحد پر کشیدہ صورتحال ہے، ہماری فوج نے اپنا بجٹ منجمد کردیا، فوج کو خراج تحسین پیش کرتا ہوں۔ انہوں نے قومی اسمبلی میں خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ملک کی حکمرانی کرنے والوں نے پیسا باہر بھجوایا، یہ بہت بڑی وجہ ہے۔

پیسا اس لیے ملک سے باہر گیا، کیونکہ جب صاحب اقتدار پیسا چوری کرے باہر لیکر جاتے ہیں تو پھر کسی کو نہیں روک سکتے۔ دبئی میں پاکستانیوں نے 8 ارب ڈالر کی پراپرٹی لیں۔ ماضی میں بہت منی لانڈرنگ کی گئی۔ منی لانڈرنگ میں اومنی گروپ زرداری فیملی نے پیسا چوری کرکے ہنڈی اور حوالہ سے باہر بھجوایا، پھر ہل میٹل اور حدیبیہ پیپر مل یہ سارا پیسا باہر بھجوایا گیا۔

ڈالر پر اپوزیشن لیڈر نے جو افسو س کیا ،انہوں نے ڈالر کی قدر بڑھنے کا الزام ہم پرلگایا۔ شہبازشریف کووضاحت کرنی چاہیے تھی کہ روپے کی قدر کیوں کم ہوئی؟ روپیہ گرنے کی وجہ منی لانڈرنگ ہے۔ یہ اسمبلی ، میں برطانیہ میں 18سال کی عمر میں گیا، میں نے وہاں جمہوریت دیکھی، پارلیمنٹ کا کام پبلک کے مفادات کی حفاظت کرنا۔ اس اسمبلی میں کمال ہوا ہے کہ ہم نے لوگوں کے پیسے چوری کرنے والوں کو اسمبلی میں تقریرکرنے کی اجازت دے دی۔

اسپیکر صاحب نے اجازت دے دی، جبکہ پیسا چوری کرنے والے اسمبلی میں تقریر کیسے کرسکتے ہیں؟ یورپ میں جس کے بارے میں پتا چل جائے کہ اس پر کرپشن کا داغ ہے۔میڈیااور کوئی ٹی وی چینل اس کو منہ نہیں لگاتا۔پارلیمنٹ میں توگھنٹوں گھنٹوں کی تقریر کا سوچ بھی نہیں سکتا۔ان پر 30سالوں سے کرپشن کے الزامات ہیں۔اسپیکر صاحب اسی ایوان میں ہم نے پارلیمنٹ کی دھجیاں اڑائیں ۔

یہاں اسمبلی نے مجرم کو پارٹی کا سربراہ بنانے کا بل پاس کیا۔ میں اپنی ساری ٹیم کو مبارکباد پیش کرتا ہوں ، مرادسعید کی تقریر زبردست تھی۔ مراد سعید سمیت وزراء کی تقاریر پرخراج تحسین پیش کرتا ہوں۔این آر او والے کس طرح سلیکٹڈ کی بات کرتے ہیں؟سلیکٹڈ وزیراعظم کی بات وہ کرتے ہیں جن کو ڈکٹیٹر کی انڈسٹری میں بنایا گیا۔وزیراعظم نے کہا کہ تاریخی خسارہ چھوڑ کرجانے والے ہم سے پوچھتے ہیں کہ خسارہ کیوں ہوا ہے؟میں معاشی ٹیم کو مبارک دیتا ہوں کہ ہم نے کرنٹ اکاؤنٹ کا خسارہ 30فیصد کم کیا ہے۔

ہم پرنیلسن منڈیلا کی جعلی آواز میں کہتے کہ روپیہ گر گیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ منی لانڈرنگ بڑی لعنت ہے،پہلے پیسا چوری کرتے ہیں ، پھر باہر بھیج کردوگنا نقصان پہنچاتے ہیں۔منی لانڈرنگ پر پورا کریک ڈاؤن کریں گے۔ انہوں نے کہا کہ ہاؤسنگ پروگرام سے پوری معیشت کو چلائیں گے، بے روزگاری کم ہوگی، 40 صنعتیں اٹھ جائیں گی۔75 فیصد غریب طبقے پر بوجھ نہ پڑے اس کیلئے 217ارب سبسڈی دی گئی ہے۔

نچلے طبقے کیلئے ہاؤسنگ اسکیم کیلئے 50 ارب اور نوجوانوں کیلئے 100ارب رکھا ہے، کسانوں کو ریلیف دیں گے۔ آئندہ ہفتے کسانوں کو بڑا پیکج دیں گے۔ وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ پاکستان کی تاریخ میں پہلی بار ایسا ہوا ہے کہ دہشتگردی ، خطرات اور مشرقی سرحد پر ایل اوسی پر فائرنگ اور کشیدہ صورتحال ہے ، ہندوستان سے ہمارے تعلقات بدقسمتی سے اچھے نہیں ہیں، ہماری وجہ سے نہیں ان کی وجہ سے اچھے نہیں ہیں۔

اس کے باوجود ہماری نے ہماری فوج نے اپنا بجٹ منجمد کردیا ہے، یعنی بجٹ کم کردیا ہے۔ صرف اس لیے کہ پاکستان کے معاشی حالات مشکل ہیں۔ انہوں نے دیکھا کہ ہم سب مل کر کوشش کررہے ہیں، میں نے کفایت شعاری اور وزراء نے اپنی تنخواہ میں 10فیصد کمی کی ہے۔ جنرل باجوہ نے مجھے خاص طور پر کہا کہ کفایت شعاری کا پیسا فاٹا اور بلوچستان پر خرچ کیا جائے۔ مشکل حالات کے باوجود فوج نے دفاعی بجٹ میں اضافہ نہیں کیا۔ مجھے خوشی ہے کہ وزیراعظم سیکرٹریٹ میں ہم نے 30 کروڑ کی بچت کی ہے۔ اگلی بار اور بچت کریں گے۔ انہوں نے کہا کہ کراچی میں جوپیسا خرچ ہونا چاہیے تھا وہ خرچ نہیں ہوا۔ کراچی کوپینتالیس ارب کا پیکیج دیا ہے۔

Advertisement

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More

x

We use cookies to give you the best online experience. By agreeing you accept the use of cookies in accordance with our cookie policy.

I accept I decline Privacy Center Privacy Settings