Advertisement

پی آئی اے کا مسافروں سے بھرا جہاز خوفناک حادثے سے بال بال بچ گیا،بیجنگ ائیر پورٹ پر بھگدڑ،حکام کا نوٹس،کیبن کریو معطل

Advertisements

پاکستان انٹرنیشنل ایئرلائنز کے ساتھ ایک ماہ سے بھی کم عرصے میں دوسری مرتبہ ایسا واقعہ پیش آیا کہ اسے 50 مسافروں کو پرواز سے آف لوڈ کرنا پڑا۔بیجنگ ایئرپورٹ پر پی آئی اے کے طیارے بوئنگ 777 کی ہنگامی سلائڈ(شوٹ)کھل گیا، جس کے باعث ایئرلائن کو پرواز کے اس سیکشن سے مسافروں کو آف لوڈ کرنے پر مجبور کردیا۔ خیال رہے کہ اس سے قبل رواں ماہ کے اوائل میں اس طرح کا پہلا واقعہ مانچسٹر ایئرپورٹ پر ہوا تھا، جہاں مسافر نے غلطی سے ایمرجنسی اخراج کا دروازہ کھول دیا تھا،

جس کے نتیجے میں 3 درجن سے زائد مسافروں کو آف لوڈ کرنا پڑا تھا اور پرواز کی اڑان میں 7 گھنٹے کی تاخیر ہوئی تھی۔تاہم اس حالیہ واقعہ پر پی آئی اے کے ترجمان کا کہنا تھا کہ واقعہ اس وقت پیش آیا جب ٹوکیو-بیجنگ-اسلام آباد کے لیے پی آئی اے کی پرواز (پی کے-853) بیجنگ ایئرپورٹ پر کھڑی تھی اور پرواز میں کھانا رکھنے کا عمل جاری تھا کہ ہنگامی سلائیڈ کھل گئی۔انہوں نے کہا کہ اس واقعے سے پرواز کی اڑان میں تقریبا 3 گھنٹے کی تاخیر ہوئی، پی آئی اے حفاظت کو اپنی اولین ترجیح سمجھتی ہے اور اسی تناظر میں اسٹینڈرڈ آپریٹنگ پروسیجر پر عمل کرتے ہوئے بیجنگ سے شامل ہونے والے 50 مسافروں کو ان کے سامان سمیت آف لوڈ کردیا۔ترجمان کا مزید کہنا تھا کہ آف لوڈ کیے گئے مسافروں کو اس تاخیر کی وجوہات سے آگاہ کردیا گیا اور انہیں ہوٹل کی سہولت فراہم کردی گئی، ان مسافروں کو پاکستان کے لیے دستیاب اگلی پرواز میں ایڈجسٹ کردیا جائے گا۔دوسری جانب قومی ایئر لائن کی اعلیٰ انتظامیہ نے اس واقعے کا سختی سے نوٹس لیا ہے اور چیف ایگزیکٹو پی آئی اے ایئرمارشل ارشد ملک نے انکوائری کا حکم دیتے ہوئے اس واقعے کے ذمہ دار کیبن کریو کو معطل کردیا۔ترجمان نے مزید بتایا کہ یہ تحقیقات یکم جولائی تک مکمل ہوجائے گی اور جو قصوروار پایا گیا اس کے خلاف قانون کے مطابق سخت تادیبی کارروائی کی جائے گی۔

Advertisement

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More

x

We use cookies to give you the best online experience. By agreeing you accept the use of cookies in accordance with our cookie policy.

I accept I decline Privacy Center Privacy Settings