Advertisement

مقبوضہ کشمیر میں بھی پاکستانی ٹیم کی دھوم۔۔ہسپتالوں میں لوگ میچ دیکھنے میں مشغول،نومولود بچوں کا نام شاہین ،بابر اور حارث رکھ دیا گیا

Advertisements

غاصب بھارتی فوج اور مودی سرکار بے پناہ ظلم و ستم کے باوجود مقبوضہ کشمیر کے عوام کی پاکستان کے لیے محبت مٹانے میں مکمل طور پر ناکام نظر آتی ہے اور اس کا عملی اس وقت بھی دیکھنے کو ملا جب مقبوضہ وادی میں بھارتی حکومت کی لاکھ کوششوں کے باوجود وہاں کے عوام نے پاکستان اور بھارت کے مابین کھیلے گئے میچ کے دوران پاکستانی ٹیم کو کھل کر سپورٹ کیا ،گزشتہ روز پاکستان اور نیوزی لینڈ کے مابین میچ کے دوران جہاں پورا پاکستان اپنی ٹیم کی دعائیں کررہاتھا وہیں مقبوضہ کشمیر کی عوام بھی پاکستانی ٹیم کی کامیابی کی خوشیاں منانے کےلئے ٹیلی ویژن سکرینز کےساتھ جڑ کر بیٹھے تھے ، سوشل میڈ یا پر وائرل ہونے والی ایک تصویر میں دیکھا جاسکتاہے کہ مقبوضہ کشمیر کے ایک ہسپتال میں آئے لوگ اپنے اپنے مریضوں کی عیادت کرنے کی بجائے ٹیلی ویژن پر پاکستان اور نیوزی لینڈ کامیچ دیکھنے میں مشغول ہیں ۔

اس روز ہسپتال میں پیدا ہونےوالے تین لڑکوں کے نام بابر ، حارث اور شاہین رکھے گئے ۔یاد رہے کہ ورلڈکپ میں پاکستان نے نیوزی لینڈ کو 6 وکٹوں سے شکست کر سیمی فائنل کی راہ میں حائل ایک اور رکاوٹ عبور کرلی۔ایونٹ کے اہم میچ میں گرین شرٹس نے ناقابل شکست بلیک کیپس کی جیت کے سلسلے کو بریک لگا کر فائنل فور کی جانب ایک اور قدم بڑھادیا، نیوزی لینڈ کے 238 رنز کے جواب میں بابر اعظم اور حارث سہیل نے 126 رنز کی قیمتی شراکت داری قائم کرکے ٹیم کو فتح سے ہمکنار کیا۔

بابر اعظم نے شاندار بیٹنگ کرتے ہوئے سنچری سکور کی اور ٹیم کی جیت میں کلیدی کردار ادا کیا جب کہ حارث سہیل نے بابر اعظم کا بھرپور ساتھ دیتے ہوئے 68 رنز کی بہترین اننگز کھیلی۔ہدف کے تعاقب میں فخر زمان اور امام الحق پر مشتمل گرین شرٹس نے اننگز کا آغاز کیا تو تیسرے ہی اوور میں 19 رنز پر فخرزمان کیچ آﺅٹ ہوگئے، انہوں نے 2 چوکوں کی مدد سے 9 رنز بنائے جب کہ 44 کے مجموعے پر امام الحق بھی چلتے بنے، وہ 19 رنز بنا سکے۔

ابتدائی نقصان کے بعد تجربہ کار حفیظ اور بابر اعظم نے 66 رنز کی پاٹنرشپ قائم کرکے مجموعے کو 110 تک پہنچایا، اس دوران بابر اعظم نے کیریئر کے 3 ہزار رنز مکمل کیے۔ محمد حفیظ 32 رنز بنا کر پویلین لوٹے۔چوتھی وکٹ پر بابر اعظم اور حارث سہیل نے ذمہ دارانہ بیٹنگ کرتے ہوئے 126 رنز کی شراکت داری قائم کرکے ٹیم کو جیت کے قریب پہنچایا جب کہ کپتان سرفراز احمد نے آخری اوور میں وننگ شارٹ کھیل کر ٹیم کی نہیہ کو پار لگایا۔

بابر اعظم نے 127 گیندوں پر 101 رنز کی ناقابل شکست اننگز کھیلی، ایونٹ میں کسی بھی پاکستانی بیٹسمین کی یہ پہلی سنچری تھی۔ نیوزی لینڈ کی جانب سے بولٹ، فرگوسن اور کین ولیمسن نے ایک ایک وکٹ حاصل کی۔اس سے قبل نیوزی لینڈ نے پاکستان کےخلاف ٹاس جیت کر بیٹنگ کا فیصلہ کیا تو اننگز کا آغاز مارٹن گپٹل اور کولن منرو نے کیا تاہم 5 کے مجموعی سکور پر محمد عامر نے مارٹن گپٹل کو بولڈ کردیا جب کہ کچھ ہی دیر بعد شاہین آفریدی نے دوسرے اوپنر کولن منرو کو پویلین کی راہ دکھائی۔

شاہین آفریدی نے زبردست بولنگ کا مظاہرہ کیا اورچوتھے نمبر پر آنےوالے راس ٹیلر کو بھی صرف 3 رنز پر آﺅٹ کردیا، شاہین کی گیند پر سرفراز نے راس ٹیلر کا زبردست کیچ لیا جبکہ کچھ ہی دیر بعد شاہین آفریدی نے ٹام لیتھم کی وکٹ بھی حاصل کرلی۔نیوزی لینڈ کے کپتان کین ولیمسن نے پاکستانی بولرز کےخلاف مزاحمت کی کوشش کی اور 41 رنز بنائے تاہم وہ شاداب خان کی گیند پر سرفراز احمد کے ہاتھوں کیچ آﺅٹ ہوگئے۔

بعد ازاں جیمز نیشم اور کولن گرینڈ ہوم نے ذمہ دارنہ بلے بازی کا مظاہرہ کیا جس کے سبب نیوزی لینڈ کی ٹیم 200 سے زائد سکور کرنے میں کامیاب رہی۔دونوں نے نہ صرف اپنی نصف سنچریاں سکور کیں بلکہ جیمز نیشم نے کیریئر کی بہترین اننگز بھی کھیلی، وہ 97 رن پر ناٹ آﺅٹ رہے۔ گرینڈ ہوم 64 رنز کی اننگز کھیل کر رن آﺅٹ ہوئے۔ قومی ٹیم کی جانب سے شاہین آفرید ی نے 3 جبکہ محمد عامر اور شاداب خان نے ایک ایک وکٹ حاصل کی۔

Advertisement

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More

x

We use cookies to give you the best online experience. By agreeing you accept the use of cookies in accordance with our cookie policy.

I accept I decline Privacy Center Privacy Settings