صرف ایک دن میں 242 افراد ہلاک، کرونا وائرس مزید کیاکرسکتا ہے؟ ماہرین نے ایسا دعویٰ کردیا کہ ہر کوئی پریشان ہوگیا

18

چین میں کرونا وائرس سے ایک ہی دن میں ریکارڈ ہلاکتیں ہوگئیں۔ چینی محکمہ صحت کے اعلیٰ حکام کے مطابق گزشتہ روز اس وائرس نے 242قیمتی جانیں نگل لیں جبکہ ماہرین نے خبردار کیا ہے کہ وبائی صورتحال بہتر ہونے سے پہلے ایک بار پھر بدترین شکل اختیار کرسکتی ہے۔ برطانوی خبررساں ادارے رائٹرز کے مطابق چینی محکمہ صحت کے حکام کا کہنا ہے کہ ہوبئی میں میں اس فلو کی طرز کے وائرس کی وجہ سے بدھ کے روز 242افراد ہلاک ہوئے جو اب تک کسی بھی ایک دن میں ہلاک ہونے والوں سے کہیں زیادہ بڑی تعدادہے۔ان ہلاکتوں کے بعد لقمہ اجل بننے والوں کی مجموعی تعداد 1,310 تک پہنچ گئی ہے۔اس سے قبل ایک دن میں سب سے زیادہ ہلاکتیں دس فروری کو ہوئی تھیں جس میں ایک سو تین افراد ہلاک ہوگئے تھے۔

ہلاکتوں میں یہ بڑااضافہ ایک ایسے وقت میں سامنے آیا ہے جب چین کی جانب سے دعویٰ کیا گیا کہ گزشتہ سے پیوستہ روز سب سے کم کیسز سامنے آئے ہیں۔ماہرین کی جانب سے اپریل تک اس مرض پر مکمل قابو پائے جانے کا دعویٰ بھی کیاگیا۔ منگل کو چین بھر میں 2,015نئے کیسز ریکارڈکئے گئے تھے لیکن جمعرات تک صرف صوبہ ہوبئی میں 14,840افراد میں اس وائرس کی موجودگی کاانکشاف ہوا ہے۔تعداد میں اضافہ کمپیوٹرائزڈ ٹیموگرافی کئے جانے کے بعد سامنے آیا ہے۔سڈنی کی نیو ساوتھ ویلز یونیورسٹی کے ایک ماہر طب کا کہنا ہے کہ بیماری میں تشخیص کی یہ نئی حکمت عمل ہلاکتوں کی تعداد میں بہت بڑے اضافے کاسبب بن سکتی ہے۔