وزیراعظم عمران خان کے حکم پر ایجنسیوں نے حریم شاہ کے حوالے سے اہم اقدام اٹھا لیا

29

وزیراعظم عمران خان کے حکم پر ایجنسیوں نے حریم شاہ سے تحقیقات کا آغاز کردیا ہے۔تفصیلات کے مطابق 24 نیوز نے دعویٰ کیا ہے کہ وزیراعظم پاکستان عمران خان کی ہدایات کے بعد ایجنسیوں نے حریم شاہ سے تحقیقات کا آغاز کردیا ہے۔ تحقیقات کا آغاز وزراء سمیت دیگر اہم شخصیات کے ساتھ ویڈیوز اور آڈیوز منظرعام پر آنے کے بعد کیا گیا ۔

اتحادیوں کے لیے فنڈز لیکن پی ٹی آئی والوں کےلیے کچھ نہیں۔۔۔اہم رکن قومی اسمبلی کی وزیراعظم کواستعفے کی دھمکی

حلقے کے مسائل حل نہ ہونے پر اہم پارٹی کارکن نے وزیر اعظم عمران خان کو استعفیٰ کی دھمکی دے دی، ملکی سیاست میں ہلچل مچ گئی۔تحریک انصاف کے رکن قومی اسمبلی عامر لیاقت حسین نے ٹوئٹر پر اپنی ہی حکومت کے خلاف شکایات کے انبار لگادیے، حلقے کے مسائل حل نہ ہونے پر استعفیٰ کی دھمکی دی تو گورنر سندھ نے انہیں اپنے پاس بلا کر مسائل حل کرنے کی یقین دہانی کرادی۔عامر لیاقت حسین نے ٹوئٹر پر لکھا ’لوگ مجھ سے سوال کرتے ہیںاور کررہے ہیں کہ مسائل کے حل کے لیے کہاں جائیں میں کھل کر بتانا چاہتا ہوں کوئی وفاقی وزیر قومی اسمبلی کے رکن کے فون تک کا جواب نہیں دیتا، حالات یہی رہے تو کم از کم میں اپنی نشست سے استعفیٰ دینے میں ذرا بھی دیر نہیں کروں گا۔ لاپرواہی،

غیرذمے داری اور بے اعتنائی کی حد ہے، جب آپ اپنے اراکین قومی اسمبلی کو جواب دینے کے روادار نہیں تو عوام کو کیا خاک ریلیف دیں گے؟‘انہوں نے وفاقی وزرا کو مخاطب کرتے ہوئے کہا ’ ایک حد تک صبر ہوتا ہے وزرا صاحبان! زمین پر انسان بن کر رہیے، انسانوں کو اپنے در کا محتاج مت سمجھیے!‘عامر لیاقت حسین کے مطابق 18 مہینے سے کوارٹرز کی لیز کا معاملہ اٹکا ہوا ہے، ترقیاتی کام شروع نہیں ہوسکے، حلقے کے لوگوں کے چھوٹے چھوٹے مسائل حل ہوسکتے ہیں اگر بعض وزرا سنجیدہ ہوجائیں۔ پی سی ون بنے پڑے ہیں لیکن وفاقی حکومت فنڈز جاری نہیں کررہی، ایسے حالات 2002 کی اسمبلی میں نہیں تھے۔انہوں نے واضح کیا کہ انہیں وزارت کی تمنا ہے نا خواہش، اگر انہیں وزارت دی بھی جائے گی تو شکریے کے ساتھ واپس کردیں گے لیکن حلقے کے عوام ناگفتہ بہ صورت حال سے دوچار ہیں۔ ’ میں اچھا نہیں لگتا تو کسی اور کو لا کر ان کو لیز دلوادیں، سڑکیں بنوادیں، آر او پلانٹس لگوادیں لیکن مسائل حل کردیں۔‘عامر لیاقت حسین کا کہنا تھا کہ کسی ایم این اے کو فنڈز زاتی طور پر کبھی ملتے تھے اور نا ہی ملنے چاہئیں مگر ترقیاتی کام تو شروع ہوں، ہم سے سکیمز مانگی گئیں جو دے دیں ، ان پر عملدر آمد قومی اسمبلی کے رکن کا کام نہیں ہے، اتحادیوں کے حلقوں کے لیے فنڈز جاری کر دیے گئے لیکن پی ٹی آئی کا ایم این اے حلقے کے عوام کو کیا جواب دے۔عامر لیاقت حسین کی جانب سے ٹوئٹر پر شکایات کی گئیں تو گورنر سندھ عمران اسماعیل نے انہیں فوری طور پر ملاقات کیلئے بلالیا۔ گورنر سندھ نے عامر لیاقت کو نہ صرف لیز کے حوالے سے اجلاس بلانے کی یقین دہانی کرائی بلکہ لائنز ایریا میں نیا یوٹیلٹی سٹور کھولنے کا بھی اعلان کردیا۔