بنگلہ دیش ٹیسٹ سیریز کے لیے اگرپاکستان نہیں آتا تو۔۔۔چیئرمین پی سی بی نے دوٹوک اعلان کردیا

23
From left, Ariful Haque, lMushfiqur Rahim, Liton Das, Mehidy Hasan Miraz, Mustafizur Rahman, Tamim Iqbal and Mahmudullah of Bangladesh during a match between West Indies and Bangladesh at Warner Park, Basseterre, St. Kitts, on July 31, 2018.

چیئرمین پی سی بی احسان مانی نے دوٹوک الفاظ میں کہہ دیا کہ پاکستان اب اپنی ہوم سیریز اپنے گھر پر کھیلے گا، بنگلادیش ثابت کرے کہ پاکستان محفوظ ملک نہیں ہے۔کراچی میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے چیئرمین پی سی بی نے کہا کہ بنگلادیش ٹیسٹ سیریز کیلئے نہیں آتا تو آئی سی سی سے رجوع کرسکتے ہیں۔انہوں نے مزید کہا کہ سری لنکا کا پاکستان میں کھیلنا انٹرنیشنل کرکٹ کی بحالی کیلئے ٹرننگ پوائنٹ ہے۔

اوپنر عابد علی، شان مسعود، کپتان اظہر علی اور بابر اعظم نے لگاتار سنچریاں بنا کر نیا ریکارڈ قائم کیا

پاکستان کے چاروں ابتدائی بلے بازوں نے سنچریوں کا نیا ریکارڈ بنادیاسری لنکا کے خلاف ٹیسٹ میچ میں قومی کرکٹ ٹیم کے ابتدائی 4 بلے بازوں نے سنچریاں بنا کر تاریخ رقم کردی۔نیشنل اسٹیڈیم کراچی میں ہونے والے دوسرے ٹیسٹ میچ میں پاکستان کے چاروں ابتدائی بلے بازوں نے شاندار کارکردگی کا مظاہرہ کیا اور سنچریاں بنانے کا کارنامہ سرانجام دیا۔پاکستان کی جانب سے اوپنر عابد علی، شان مسعود، کپتان اظہر علی اور بابر اعظم نے لگاتار سنچریاں بنا کر نیا ریکارڈ قائم کیا۔قومی ٹیم کے اوپنرز شان مسعود اور عابد علی نے 278 رنز کی شراکت قائم کی تھی جب کہ اظہر علی نے 142 گیندوں پر 11 چوکوں کی مدد سے اپنی سنچری مکمل کی جو ان کے کیرئیر کی تیز ترین سنچری ہے۔علاوہ ازیں بابر اعظم نے اظہر علی کا بھرپور ساتھ دیتے ہوئے اپنی سنچری بھی بنائی۔ شان مسعود 135، عابد علی 174 اور اظہر علی 118 رنز بناکر آؤٹ ہوئے جبکہ بابر اعظم 100 رنز بناکر ناقابل شکست رہے۔اس سے قبل بھارت کے ابتدائی چار کھلاڑیوں نے 2007 میں بنگلا دیش کے خلاف سنچریاں اسکور کی تھیں۔ بھارت کی جانب سے وسیم جعفر، دنیش کارتک، راہول ڈریوڈ اور سچن ٹنڈولکر نے سنچریاں اسکور کی تھیں۔