Advertisement

25 سالہ ضرغام شہید کے والد کی ہمت کو سلام!! کیپٹن ضرغام شہید کے والدبیٹے کی میت کے پاس کھڑے ہوکر کیا دعا مانگتے رہے؟

Advertisements

پاک فوج کے کیپٹن نے اپنی جان مادر وطن پر نچھاور کردی ۔ آئی ایس پی آر کے مطابق کیپٹن ضرغام فرید ضلع مہمند میں بارودی سرنگ ناکارہ بنانے میں مصروف تھے کہ بارودی سرنگ دھماکے سے پھٹ گئی جس کے نتیجے میں کیپٹن ضرغام فرید شہید اوربم ڈسپوزل ٹیم کے رکن سپاہی ریحان شدید زخمی ہوگئے۔ 25 سالہ کیپٹن ضرغام غیر شادی شدہ تھے اور وہ سرگودھا سے تعلق رکھتے تھے۔

۔اس موقع ہر جہاں کیپٹن ضرغام فرید کے والد بیٹے کی شہادت پر فخر کر رہے تھے وہیں بیٹے کی جدائی میں ان کا شدت غم سے برا حا ل تھا،تاہم سب سے بڑے بیٹے کی جدائی بھی ان کا حوصلہ کم نہ کر سکی۔میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ ضرغام میرا سب سے بڑا بیٹا تھا،انہوں نے پاکستان اور زندہ باد اور آرمی زندہ باد کے نعرے بھی لگائے۔کیپٹن ضرغام فرید کی نماز جنازہ ادا کر دی گئی ہے۔ضلعی انتظامیہ اور شہریوں کی بڑی تعداد نے شہید کی نماز جنازہ میں شرکت کی۔

اس حوالے سے ایک ویڈیو بھی سوشل میڈیا پر وائرل ہو رہی ہے جس میں کیپٹن ضرغام فرید کے والد اپنے بیٹے کی میت کے ساتھ کھڑے ہیں اور دعا کر ہے ہیں کہ اللہ ان کے بیٹے کو جنت میں جگہ دے۔اللہ پاکستان کو محفوظ کرے۔اللہ تعالی مسمانوں کو محفوظ کرے۔اللہ پاک فوجیوں کی حفاظت کرے۔خیال رہے کیپٹن ضرغام فرید کی عمر صرف 25برس تھی اور ابھی تک وہ غیر شادی شدہ تھے۔سوشل میڈیا پر ان کی کچھ تصاویر بھی وائرل ہو رہی ہیں جس نے ہر پاکستانی کو غمزدہ کر دیا ہے۔

اب تک اس دھرتی پر لاکھوں نوجوان قربان ہو چکے ہیں۔ جنھوں نے اپنی جان کی پرواہ کیے بغیر صرف اور صرف اس ملک کی حفاظت کی خاطر اپنی جان قربان کی ہے۔
ان شہیدوں کے گھر والوں کے حوصلے بھی بلند ہوتے ہیں۔اور وہ اپنے بیٹے اور بھائی کی شہادت پر فخر کر تے ہیں۔

دشمنوں کی طرف سے جنگ کی دھمکیاں لگائی جاتی ہیں لیکن کوئی بھی دھمکی ہمارے جوانوں کا حوصلہ کم نہیں کر سکتی اور یہ ہر وقت اپنے ملک پر قربان ہونے کے لیے تیار ہوتے ہیں۔پاک فوج دنیا کی بہترین فوج ہے۔پاک فوج کے ہزاروں جوانوں نے اپنی جان کا نذرانہ پیش کر کے اس ملک میں امن قائم کرنے کے لیے اپنا کردار ادا کیا ہے۔

Advertisement

x

We use cookies to give you the best online experience. By agreeing you accept the use of cookies in accordance with our cookie policy.

I accept I decline Privacy Center Privacy Settings