افغانستان کے بعد حکومت نے ایک اور ملک سے ملحقہ سرحد پربھی باڑ لگانے کا فیصلہ کرلیا، یہ انڈیا نہیں بلکہ۔۔۔

60
Pakistani soldiers patrol next to a newly fenced border fencing along with Afghan's Paktika province border in Angoor Adda in Pakistan's South Waziristan tribal agency on October 18, 2017. The Pakistan military vowed on October 18 a new border fence and hundreds of forts would help curb militancy, as it showcased efforts aimed at sealing the rugged border with Afghanistan long crossed at will by insurgents. / AFP PHOTO / AAMIR QURESHI

وفاقی وزیر برائے منصوبہ بندی خسرو بختیار نے کہا ہے کہ پاکستان نے افغانستان کے بعد ایرانی سرحد پر بھی باڑ لگانے کا فیصلہ کر لیا ہے۔اسلام آباد میں میڈیا سے غیر رسمی بات چیت میں ان کا کہنا تھا کہ پاکستان میں سکیورٹی چیلنجز کی ایک بڑی وجہ ہمسایہ ملکوں کے حالات ہیں۔ افغانستان کے ساتھ 100 کلومیٹر کی سرحد پر باڑ دس سال قبل لگا لینی چاہئے تھی۔ وفاقی وزیر نے کہا کہ پاک ایران سرحد پر بھی باڑ لگانے کا منصوبہ ہے۔ ملٹری اور سول لیڈرشپ نے سکیورٹی صورت حال پر کافی حد تک قابو پا لیا ہے، سرمایہ کاری، مالی ترقی کیلئے امن و استحکام ضروری ہے۔ پاک افغان بارڈر پر کافی پیش رفت ہوچکی ہے اب یہ کام 2020 تک مکمل کر لیا جائے گا۔