Advertisement

ہم جب بھی اپنے کمرے سے باہر نکلتے ہیں تو لوگ کیا پوچھتے ہیں؟جنوبی افریقی کھلاڑی نے پاکستانیوں سے متعلق دلچسپ بات بتا دی

Advertisements

جنوبی افریقہ سے تعلق رکھنے والے اسلام آباد یونائیٹڈ کے آل راؤنڈر وین پارنیل نے کہا ہے کہ وہ پاکستان میں اپنے آپ کو دنیا میں سب سے زیادہ محفوظ سمجھ رہے ہیں۔وین پارنیل اسلام آباد یونائیٹڈ کے دیگر غیر ملکی کھلاڑیوں کے ہمراہ گزشتہ روز پاکستان پہنچے تھے۔سماجی رابطے کی ویب سائٹ پر اسلام آباد یونائیٹڈ کو ہی دیے گئے اپنے انٹرویو میں وین پارنیل کا کہنا تھا کہ میں جب سے پاکستان کی سرزمین پر پہنچا ہوں تب سے لوگوں سے متاثر ہورہا ہوں۔

انہوں نے اپنے اس تجربے کے حوالے سے بتایا کہ ہم جب بھی اپنے کمرے سے باہر نکلتے ہیں تو لوگ ہم سے پوچھتے ہیں کہ کیا ہمیں کسی چیز کی ضرورت تو نہیں ہے۔وین پارنیل نے کہا کہ میں پاکستان میں اپنے آپ کو دنیا میں سب سے زیادہ محفوظ سمجھ رہا ہوں۔

انہوںنے کہاکہ میں نے ماضی میں پاکستان کا دورہ کرنے والی جنوبی افریقی ٹیم کے کھلاڑیوں سے یہاں لوگوں کی مہمان نوازی کے بارے میں پہلے ہی بہت کچھ سنا ہوا تھا لیکن اب یہ تجربہ کرکے بہت خوشی ہو رہی ہے۔

آل راؤنڈر نے کہا کہ پاکستانیوں میں کرکٹ کے حوالے سے بہت جوش و جذبہ ہے جس کی مثال 2017 میں ہونے والی آئی سی سی چیمپیئنز ٹرافی کے دوران برمنگھم میں پاکستان اور جنوبی افریقہ کے درمیان ہونے والے میچ تھا جس میں ایسا محسوس ہورہا تھا کہ ہم پاکستان میں کھیل رہے ہیں۔جنوبی افریقی آل راؤنڈر کا کہنا تھا کہ کراچی میں میچز کے انعقاد اور سیکیورٹی کا تمام تر سہرا پاکستان کرکٹ بورڈ (پی سی بی) کو جاتا ہے۔

اپنے انٹرویو کے دوران وین پارنیل نے بتایا کہ وہ اردو سیکھنے کی کوشش کر رہے ہیں، اس دوران انہوں نے ایک سے لے کر دس تک گنتی بھی سنائی۔اس کے علاوہ انہوں نے کہا کہ میں اسلام آباد یونائیٹڈ کے کھلاڑی باصلاحیت ہیں اور ان کی لاہور قلندرز کے خلاف میچ کے لیے بھرپور تیاری ہے۔وین پارنیل نے کہا کہ میں اسلام آباد یونائیٹڈ کے چند نوجوان کھلاڑیوں کو مستقبل میں پاکستان کرکٹ ٹیم میں کھیلتا دیکھ رہا ہوں۔

Advertisement

x

We use cookies to give you the best online experience. By agreeing you accept the use of cookies in accordance with our cookie policy.

I accept I decline Privacy Center Privacy Settings