جیل میں قید خواتین کے  الزامات کی ویڈیو سوشل میڈیا پر تیزی کیساتھ وائرل ہو رہی ہے ۔ تفصیلات کے مطابق ویڈیو میں ایک خاتون قیدی نے محکمہ جیل خانہ جات کے اعلیٰ افسران پر خواتین قیدیوں سے زیادتی جیسے سنگین الزامات عائد کیے ہیں ۔ خاتون نے اپنی شناخت چھپا کر خود کو لاہور جیل کی قیدی خاتون ظاہر کیا اور کہا ہے کہ جیل خانہ جات میں خواتین قیدیوں کا استحصال کیا جاتا ہے ، خاتون کا کہنا تھا کہ ہمیں اعلی افسران کو خوش کرنے کیلئے استعمال کرنے کیلئے مجبور کیا جاتا ہے ۔ رات کے وقت

انہیں ایک جیل سے دوسری جیل منتقل کرنے کی آڑ میں انہیں ڈی آئی جی دفتر پہنچایا جاتا ہے جہاں موجود افسران کو خوش کرنے کیلئے دبائو ڈالا جاتا ہے ، خاتون نے کہا ہے کہ میرے علاوہ یہاں قید دیگر خواتین کو نکال کر افسران کو خوش کرنے کیلئے استعمال کیا جاتا ہےاور ان خواتین کو ڈی آئی جی لاہور ریجن ملک مبشر سمیت دیگر افسران کے پاس بھیجا جاتا ہے۔خاتون نے وزیراعظم عمران خان سے ہونیوالے واقعے پر نوٹس لے کر خواتین کی عزتوں کو محفوظ بنانے کی درخواست کی ہے اور انصاف کا مطالبہ کیا ہے ۔