Advertisement

پاکستانی بحریہ نے آسٹریلوی خاندان کو بال بال بچالیا، کس جگہ اچانک مدد کے لئے پہنچ گئی؟ جان کر آپ بھی تعریف کرنے پر مجبور ہوجائیں گے

Advertisements

شتی میں بیٹھ کر دنیا کا چکر لگانے کے لئے نکلنے والے آسٹریلوی خاندان کا یمن کے سمندر میں موت سے آمنا سامنا ہو گیا لیکن ان کی خوش قسمتی تھی کہ جب یہ خطرناک بحری قزاقوں کے گھیرے میں تھے تو عین اس وقت پاکستانی بحریہ کا ایک جنگی جہاز ان کی مدد کو آن پہنچا۔

میل آن لائن کے مطابق لاشین ٹرنر، ان کی اہلیہ لوئس اور بچے سیارا اورکائی یمن کے ساحل سے پرے اپنی کشتی میں محو سفر تھے کہ بحری قزاقوں کی ایک کشتی نے ان کا تعاقب شروع کردیا۔ مسلح قزاقوں کے سامنے وہ بے بس تھے اور ان سب کی جان کو خطرہ لاحق تھا۔ کچھ ہی دیر میں قزاقوں کی مزید کشتیاں ان کے قریب آنے لگیں اور چاروں طرف سے انہیں گھیر لیا گیا۔

اشین کا کہنا ہے کہ انہوں نے ریڈیو پر ایمرجنسی ہیلپ کے لئے پیغام نشر کیا جسے قریبی سمندر میں موجود ایک جاپانی جنگی بحری جہاز نے سنا اور ان کی مدد کے لئے کوششیں شروع کر دیں۔ ان کی لوکیشن کا پتا چلانے اور رہنمائی کے لئے ایک ہیلی کاپٹرکو فوری طور پر بھیج دیا گیا۔ اس پریشان حال خاندان کی مدد کے لئے فضا میں تو ہیلی کاپٹرموجود تھا لیکن بحری قزاق اب بھی ان کا تعاقب کررہے تھے اور کسی بھی وقت ان پر حملہ کر سکتے تھے۔ ایسے میں اس خاندان کی مدد کو پاکستانی بحریہ کا ایک جہاز پہنچا جسے دیکھتے ہی قزاقوں نے اپنی کشتیاں واپس موڑیں اور مخالف سمت میں بھاگ نکلے۔

Advertisement

Source Dailypakistan.com.pk
x

We use cookies to give you the best online experience. By agreeing you accept the use of cookies in accordance with our cookie policy.

I accept I decline Privacy Center Privacy Settings