Advertisement

وزیراعظم کا باضابطہ طور پی ایس ایل کو پاکستان منتقل کرنے کا اعلان ۔۔ تمام میچ کن کن شہروں میں ہوں گے؟ جانئے

Advertisements

وزیراعظم عمران خان نے عوام کو خوشخبری دیتے ہوئے اعلان کیا ہے کہ آئندہ پاکستان سپر لیگ (پی ایس ایل) کے تمام میچ پاکستان میں ہونگے۔وزیراعظم پاکستان عمران خان نے یہ اہم اعلان اسلام آباد میں ایک تقریب سے خطاب کے دوران کیا۔ انہوں نے کہا کہ ہم نے دہشت گردی کا ڈٹ کر مقابلہ کیا جس کی وجہ سے آج پاکستان ایک محفوظ ملک ہے، مسلح افواج،سکیورٹی اداروں کی بدولت پاکستان میں امن قائم ہوا جس پر میں مسلح افواج،سکیورٹی ،انٹیلی جنس اداروں کو خراج تحسین پیش کرتاہوں،آئندہ پی ایس ایل مکمل طور پر پاکستان میں ہوگا۔

یاد رہے کہ2016ءمیں پاکستان سپر لیگ کا پہلا سیزن مکمل طور پر متحدہ عرب امارات میں کھیلا گیا تھا تاہم پاکستان کرکٹ بورڈ نے 2017ءکا پی ایس ایل فائنل قذافی سٹیڈیم ،لاہور میں کروایا تھا لیکن کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کے بیشتر غیر ملکی کھلاڑی پاکستان نہیں آئے تھے،پی ایس ایل کے تیسرے ایڈیشن میں دو پلے آف میچز لاہور اور فائنل نیشنل سٹیڈیم ،کراچی میں کھیلا گیا جو انتہائی کامیاب ثابت ہوا،پاکستان کرکٹ بورڈ نے پی ایس ایل4کے آخری 8میچز پاکستان میں کروانے کا اعلان کیا تھا جن میں سے 3میچز لاہور اور5کراچی میں کھیلے جانے تھے تاہم حالیہ پاک بھارت کشیدگی کے باعث تمام میچز کراچی شفٹ کردیئے گئے،اب حکومت اور پاکستان کرکٹ بورڈ ملک میں انٹر نیشنل کرکٹ واپس لانے کے لیے سر توڑ کوششیں کررہے تھے ۔

ذرائع کے مطابق پاکستا ن میں پی ایس ایل میچز لاہور ،کراچی اور ملتان میں کروائے جانے کا امکان ہے جب کہ راولپنڈی کرکٹ سٹیڈیم مکمل طور پر تیار ہونے کی صورت میں کچھ میچز وہاں بھی کروائے جاسکتے ہیں ۔

بھارتی کپتان نے ورلڈ کپ کیلئے 5 ٹیموں کو مضبوط قرار دے دیا

بھارتی کرکٹ ٹیم کے کپتان ویرات کوہلی نے ورلڈ کپ میں 5 ٹیموں کو مضبوط قرار دے دیا لیکن پاکستان کے بارے میں ان کی رائے ہے کہ وہ کسی بھی ٹیم کو ہراسکتے ہیں۔آسٹریلیا سے سیریز ہارنے کے بعد پریس کانفرنس میں ورلڈ کپ کے بارے میں بات کرتے ہوئے بھارتی کرکٹ ٹیم کے کپتان ویرات کوہلی نے کہا کہ ورلڈ کپ کے آغاز کے وقت کوئی بھی ٹیم فیورٹ نہیں ہوگی۔

ویسٹ انڈیز، انگلینڈ، نیوزی لینڈ کی ٹیمیں مضبوط نظر آتی ہیں، بھارتی ٹیم بھی مضبوط ہے اور اب آسٹریلیا کی ٹیم میں بھی بہتری آئی ہے۔انہوں نے پاکستان ٹیم کے بارے میں بات کرتے ہوئے کہا کہ یہ ایسی ٹیم ہے جو اپنے دن پر کسی کو بھی ہراسکتی ہے۔ ویرات کوہلی نے قرار دیا کہ اتنی مضبوط ٹیموں کی موجودگی میں اصل اہمیت اس بات کی ہوگی کہ آپ ورلڈ کپ میں کس حکمت عملی کے ساتھ میدان میں اترتے ہیں۔

خیال رہے کہ آسٹریلیا اور بھارت کے مابین کھیلی گئی 5 ایک روزہ میچز کی سیریز انڈیا کی شکست کے ساتھ ختم ہوئی ہے۔ سیریز کے پہلے 2 میچز میں انڈیا نے کامیابی حاصل کی جب کہ آخری تینوں میچز میں پاکستانی نژاد عثمان خواجہ کی زبردست بلے بازی کی بدولت فتح آسٹریلیا کے نام رہی۔

Advertisement

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More

x

We use cookies to give you the best online experience. By agreeing you accept the use of cookies in accordance with our cookie policy.

I accept I decline Privacy Center Privacy Settings