Advertisement

وزیراعظم عمران خان کو کرپشن کے خاتمے کے لیے کرنسی نوٹوں پر پانچ سال کی ایکسپائری ڈیٹ ڈالنے کا شاندار مشورہ دے دیا گیا

Advertisements

معروف و سینئر صحافی حسن نثار نے کرپشن کے خاتمے کے لیے کرنسی نوٹوں پر ایکسپائری ڈیٹ ڈالنے کا مشورہ دے دیا۔ معروف صحافی نے حکومت کو مشورہ دیتے ہوئے کہا کہ کرنسی نوٹوں پر پانچ سال کی ایکسپائری ڈیٹ ڈال دی جائے، اس طرح ہر پانچ سال بعد لوگوں کو نوٹ تبدیل کرانا پڑیں گے، اس سے کرپشن کا خاتمہ ہوگا۔ انہوں نے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ اگر ہر پانچ سال بعد نوٹ تبدیل کر دیے جائیں تو کرپشن میں زمین آسمان کا فرق آ جائے گا۔

انہوں نے حکومت کو مشورہ دیتے ہوئے کہا کہ ماہرین معاشیات کو بلا کر اس پر بحث کروا لیں کہ ایسا کرنے سے کرپشن ختم ہو گی یا نہیں، معروف صحافی نے کہا کہ جس طرح کھانے پینے کی اشیاء اور ادویات پر ایکسپائری مدت موجود ہوتی ہے اگر نوٹوں پر ایکسپائری کی تاریخ ڈال دی جائے تو کرپشن کے خاتمے میں بہت مدد ملے گی۔

وزیر اعظم عمران خان نے نوجوانوں کی فلاح و بہبود کے سلسلے میں موجودہ حکومت کے وژن کو عملی جامہ پہنانے کے لئے ایک جامع اورمربوط پروگرام ”وزیر اعظم کامیاب جوان پروگرام“کی اصولی منظوری دیدی۔ جمعرات کو وزیر اعظم عمران خان ”وزیرِ اعظم کامیاب جوان پروگرام“کے سلسلے میں وزیر اعظم آفس میں منعقد ہونیوالے خصوصی اجلاس کی صدرات کر رہے تھے۔ معاون خصوصی محمد عثمان ڈار کی وزیر اعظم عمران خان کو وزیر اعظم کامیاب جوان پروگرام اور اس کے تحت نوجوانوں کے لئے  کیے جانے والے مختلف اقدامات پر بریفنگ دی گئی۔وزیر اعظم کو بتایا گیا کہ ماضی میں کثیر رقوم خرچ کرنے کے باوجود بھی کوئی مربوط اور مناسب حکمت عملی نہ ہونے کے سبب نوجوانوں کے لئے شروع کیے جانے والے پروگراموں سے مطلوبہ نتائج حاصل نہیں ہو سکے۔ وزیرِ اعظم کو بتایا گیا کہ کامیاب جوان پروگرام کے تحت نوجوانوں کو روزگار، تعلیم کی فراہمی، کے علاوہ انہیں ہنر مند بنانے اور انکی تعمیری صلاحیتیوں کو مثبت طور پر برؤے کار لانے کیلئے مختلف پروگراموں کا اجراء کیا جائے گا۔

وزیر اعظم کو بتایا گیا کہ اسٹریٹیجک یوتھ ڈویلپمنٹ روڈمیپ کے تحت نیشنل یوتھ ڈویلپمنٹ فریم ورک مرتب کیا جا چکا ہے نوجوانوں کی ایک نیشنل یوتھ کونسل بھی تشکیل دی جا چکی ہے۔ وزیرِ اعظم کو بتایا گیا کہ ملکی تاریخ میں پہلی دفعہ وزیرِ اعظم یوتھ پلس پورٹل کی مدد سے نوجوانوں سے فیڈ بیک حاصل کیا جائے گا تاکہ جہاں ملکی تعمیر و ترقی میں نوجوانوں کی آراء کو شامل کیا جا سکے وہاں ان کی تجاویز کو مد نظر رکھ کر پالیسیاں بھی تشکیل دی جائیں۔ وزیر اعظم کو بتایا گیا کہ ملکی تاریخ میں پہلی دفعہ کامیاب جوان پروگرام کے تحت نیشنل یوتھ ڈویلپمنٹ انڈیکس مرتب کیا جائے گا۔ وزیر اعظم کو بتایا گیا کہ کامیاب جوان پروگرام  کے تحت چالیس سے زائدشعبہ جات کی نشاندہی کی جا چکی ہے جس کے ضمن میں صوبائی اور وفاقی محکموں میں اشتراک کار کا عمل شروع کیا جا چکا ہے تاکہ ان شعبوں میں نوجوانوں کی فلاح و بہبود کو یقینی بنایا جا سکے۔ کامیاب جوان پروگرام کے تحت شروع کیے جانے والے مختلف پروگرامز میں یوتھ اکنامک ڈویلپمنٹ ایمپاورمنٹ پروگرام،  وزیرِ اعظم گرین یوتھ موومنٹ، پی ایم سٹارٹ اپ پاکستان، انٹرن شپ پروگرام، ہنرمند پروگرام، کامیاب جوان ایمپلائمنٹ ایکسچینج پروگرام جیسے منصوبے شامل ہیں۔ وزیراعظم کو بتایا گیا کہ ملکی تاریخ میں پہلی دفعہ یونیورسٹیوں اور فنی تعلیم کے اداروں کی جانب سے ہنر مند جوانوں کے بارے میں فراہم کردہ معلومات کی بنیاد پر ایک ڈیٹا بیس،

پرایم منسٹر ایمپلائمنٹ ایکسچینج  پلیٹ فارم، بنایا جائے گا اور اس پلیٹ فارم کو تمام قومی اداروں سے منسلک کیا جائے گاتاکہ  ان اداروں میں خالی اسامیوں کے بارے میں معلومات میسر آ سکیں اور ہنر مند نوجوانوں کو نو کریوں کی تلاش اور فراہمی میں مدد ملے۔ وزیر اعظم کو بتایا گیا کہ وزیرِ اعظم سٹارٹ اپ پاکستان پروگرام کے تحت نوجوانوں کو کاربار کے لئے آسان شرائط پر قرضے فراہم کیے جائیں گے۔ اس کے علاوہ گرین یوتھ موومنٹ میں نوجوانوں کی شمولیت کو یقینی بنایا جائیگا۔  وزیر اعظم نے جامع اور مفصل پروگرام تشکیل دینے پر معاون خصوصی محمد عثمان ڈارکی کاوشوں کو سراہا۔ وزیرِ اعظم کی جانب سے اصولی منظوری کے بعد پروگرام کو کابینہ کی منظوری کے لئے پیش کیا جائے گا جس کے بعد اس پروگرام کا باقاعدہ اعلان کیا جائے گا۔

Advertisement

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More

x

We use cookies to give you the best online experience. By agreeing you accept the use of cookies in accordance with our cookie policy.

I accept I decline Privacy Center Privacy Settings