Advertisement

نیب کی درخواست پر خواجہ سعد رفیق اور خواجہ سلمان رفیق کے پاسپورٹ بلاک کر دیے گئے

Advertisements

قومی احتساب بیورو نے خواجہ سعد رفیق اور سلمان رفیق کے پاسپورٹ بلاک کرنے کے لیے خط لکھ دیا۔امیگریشن حکام نے دونوں لیگی رہنماوں کے پاسپورٹ بلاک کر دئیے ہیں۔تفصیلات کے مطابق سابق وزیر ریلوے خواجہ سعد رفیق کی گرفتاری بھی چند روز میں ممکن ہے۔جب کہ وفاقی وزیر فواد چوہدری بھی اس بات کا اشارہ دے چکے ہیں کہ شہباز شریف کی گرفتاری تو پہلی گرفتاری ہے۔

ابھی مزید بڑی گرفتاریاں ہونی ہیں۔سعد رفیق کو آشیانہ ہاؤسنگ اسکینڈل میں گرفتار کرنے کا امکان ظاہر کیا جا رہا ہے۔واضح رہے نیب نے خواجہ سعد رفیق کو 16اکتوبر کو طلب کیا ہے۔میڈیا رپورٹس میں بتایا گیا کہ نیب نے خواجہ سعد رفیق اور سلمان رفیق کو طلب کر لیا۔ خواجہ برادران کو 16اکتوبر کو پیراگون ہاؤسنگ کیس میں طلب کیا گیا۔دونوں بھائی 16اکتوبر کو نیب کے روبرو پیش ہوں گے۔

خواجہ برادران کو منی ٹریل ساتھ لانے کا حکم دیا گیا ہے جب کہ دنوں بھائیوں نے تا حال مذکورہ ریکارڈ نیب میں جمع نہیں کروایا۔اس حوالے سے تازہ ترین خبر یہ ہے کہ نیب نے خدشہ ظاہر کیا ہے کہ خواجہ سعد رفیق اور سلمان رفیق کے ملک سے فرار ہو جانے کا خدشہ ہے۔اس خدشے کے پیش نظر نیب نے حکومت کو خط لکھ دیا ہے ۔اس خط میں حکومت سے درخواست کی گئی ہے کہ خواجہ سعد رفیق اور انکے بھائی سلمان رفیق کے ملک چھوڑ جانے کے خدشے کی پیش نظر انکا پاسپورٹ بلاک کردیا جائے تاکہ دونوں ملزم ملک سے فرار نہ ہو سکیں۔

تازہ ترین پیش رفت کے مطابق خواجہ سعد رفیق اور سلمان رفیق کے پاسپورٹ بلاک کر دیا گیا ہے۔تاہم اس حوالے سے ابھی تک کیا پیش رفت ہو چکی ہے اس حوالے سے انتظار کرنا ہوگا۔یاد رہے کہ کچھ روز قبل آشیانہ ہاوسنگ اسکیم میں شراکت دار قیصر امین بٹ کو گرفتار کیا گیا تھا۔

Advertisement

x

We use cookies to give you the best online experience. By agreeing you accept the use of cookies in accordance with our cookie policy.

I accept I decline Privacy Center Privacy Settings