Advertisement

ننھی بچی زینب کو سپرد خاک کردیا گیا تدفین کے وقت کوئی بھی اپنے آنسو نہ روک سکا ۔۔

Advertisements

ننھی بچی زینب کو سپرد خاک کردیا گیا تدفین کے وقت کوئی بھی اپنے آنسو نہ روک سکا ۔۔ پیش امام نے کس حوصلے سے نمازِ جنازہ ادا کروائی ؟

تنظیم اتحاد امت پاکستان کے تحت50مفتیان کرام نے قصور میں معصوم بچی کے ساتھ ہونے والے زیادتی کیس کے خلاف اجتماعی فتوی جاری کر دیا ہے جس میں کہا گیا ہے کہ ایسے بدترین گناہ کی اسلام میں کوئی معافی نہیں ،اس طرح کے گناہ کبیرہ میں ملوث افراد کو سوسائٹی سے پاک کر دینا چاہیے۔اس واقعے میں غفلت برتنے والے بھی رعایت کے مستحق نہیں ،متاثرہ بچے کے والدین کو دلاسہ دینا حکومت کی ذمہ داری ہے ۔فتوی میں کہا گیا ہے کہ بطورتعزیر شریعت مطہرہ میں ایسے عادی مجرموں کی سزا قتل ہے،ہماری حکومت وقت اس کیس میں ذاتی دلچسپی لے اور شفاف تحقیقات کروا کے اصل مجرموں کو بذریعہ عدالت پھانسی کی سزا دی دلوائے ،جبکہ ان کی مجرموں کی معاونین ،پشت پناہی کرنے والوں کو کڑی سزا دی جائے ۔

Advertisement