Advertisement

”میں پاکستان نہیں آ سکتا کیونکہ۔۔۔“ کپل دیو اور سدھو تو پاکستان آ رہے ہیں

Advertisements

سابق بھارتی کپتان سنیل گواسکر نے عمران خان کی تقریب حلف برداری میں شرکت سے معذرت کر لی ہے۔عمران خان نے گواسکر کے علاوہ کپل دیو اور نوجوت سدھو کو بھی دعوت نامہ بھجوایا تھا۔سدھو نے اس بات کی تصدیق کی ہے کہ وہ اور کپل دیو پاکستان آ رہے ہیں جبکہ سنیل گواسکر نے اپنی مصروفیات کے سبب عمران خان کی تقریب ِ حلف برداری میں شریک ہونے سے معذرت کی ہے۔سنیل گواسکر نے بھارتی خبر رساں ادارے نے ’انڈیاٹوڈے‘ سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ میں نے عمران خان سے ٹیلی فونک رابطہ کر کے انہیں کامیابی پر مبارکباد پیش کی ہے تاہم کچھ ذاتی مصروفیات کے باعث پاکستان نہیں جا سکتا کیونکہ 18اگست کو بھارت اور انگلینڈ کے میچ کے باعث میں انگلینڈ میں ہوں گا

سابق بھارتی کپتان سنیل گواسکر نے عمران خان کی تقریب حلف برداری میں شرکت سے معذرت کر لی ہے۔عمران خان نے گواسکر کے علاوہ کپل دیو اور نوجوت سدھو کو بھی دعوت نامہ بھجوایا تھا۔سدھو نے اس بات کی تصدیق کی ہے کہ وہ اور کپل دیو پاکستان آ رہے ہیں جبکہ سنیل گواسکر نے اپنی مصروفیات کے سبب عمران خان کی تقریب ِ حلف برداری میں شریک ہونے سے معذرت کی ہے۔سنیل گواسکر نے بھارتی خبر رساں ادارے نے ’انڈیاٹوڈے‘ سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ میں نے عمران خان سے ٹیلی فونک رابطہ کر کے انہیں کامیابی پر مبارکباد پیش کی ہے تاہم کچھ ذاتی مصروفیات کے باعث پاکستان نہیں جا سکتا کیونکہ 18اگست کو بھارت اور انگلینڈ کے میچ کے باعث میں انگلینڈ میں ہوں گا ۔گواسکر کا کہنا تھا کہ ایک کرکٹر کے طور پر عمران خان کئی بار بھارت آ چکے ہیں۔وہ بھارت کو بہت زیادہ جانتے ہیں اور توقع کی جاسکتی ہے کہ وہ دونوں ملکوں میں تعلقات کے فروغ میں مثبت کردار ادا کریں گے۔نوجوت سدھو نے اس بات کی تصدیق کی ہے کہ انہیں عمران خان کی تقریبِ حلف برداری میں شرکت کا دعوت نامہ مل گیا ہے۔بھارتی میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے بتایا کہ کپل دیو نے بھی تصدیق کر دی ہے کہ انہیں بھی دعوت نامہ موصول ہو گیا ہے۔پاکستان تحریک انصاف کی جانب سے بھیجے گئے دعوت نامے میں لکھا گیا ہے کہ ”چیئرمین تحریک انصاف عمران خان کی وزیراعظم پاکستان کی حیثیت سے حلف برداری کی تقریب میں آپ کو مدعو کرنا انتہائی مسرت کا باعث ہے۔حلف برداری کی یہ تقریب ہفتہ 18اگست 2018ءکو اسلام آباد میں ہو گی۔اس تاریخی موقع پر آپ کی موجودگی باعث افتخار ہو گی“۔

۔گواسکر کا کہنا تھا کہ ایک کرکٹر کے طور پر عمران خان کئی بار بھارت آ چکے ہیں۔وہ بھارت کو بہت زیادہ جانتے ہیں اور توقع کی جاسکتی ہے کہ وہ دونوں ملکوں میں تعلقات کے فروغ میں مثبت کردار ادا کریں گے۔نوجوت سدھو نے اس بات کی تصدیق کی ہے کہ انہیں عمران خان کی تقریبِ حلف برداری میں شرکت کا دعوت نامہ مل گیا ہے۔بھارتی میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے بتایا کہ کپل دیو نے بھی تصدیق کر دی ہے کہ انہیں بھی دعوت نامہ موصول ہو گیا ہے۔پاکستان تحریک انصاف کی جانب سے بھیجے گئے دعوت نامے میں لکھا گیا ہے کہ ”چیئرمین تحریک انصاف عمران خان کی وزیراعظم پاکستان کی حیثیت سے حلف برداری کی تقریب میں آپ کو مدعو کرنا انتہائی مسرت کا باعث ہے۔حلف برداری کی یہ تقریب ہفتہ 18اگست 2018ءکو اسلام آباد میں ہو گی۔اس تاریخی موقع پر آپ کی موجودگی باعث افتخار ہو گی“۔

Advertisement

x

We use cookies to give you the best online experience. By agreeing you accept the use of cookies in accordance with our cookie policy.

I accept I decline Privacy Center Privacy Settings