Advertisement

’میری 15 سال کی عمر میں زبردستی شادی کروائی گئی اور پھر روزانہ میرا ۔۔۔۔۔۔ملکہ حسن نے اپنی دلخراش کہانی سنادی

Advertisements

35سالہ روبی میری نامی بنگلہ دیشی نژاد برطانوی خاتون نے 2017ءمیں ’مس گلیکسی یوکے‘ اور رواں سال ’مس یونائیٹڈ کنگڈم ارتھ‘ کا مقابلہ جیتا۔ گزشتہ دنوں برطانوی نشریاتی ادارے کو انٹرویو دیتے ہوئے اس نے اپنی ماضی کی ایسی دلخراش کہانی دنیا کو سنادی ہے کہ ہر سننے والا افسردہ ہو جائے۔ روبی میری نے انٹرویو میں بتایا کہ ”جب میں صرف

15سال کی تھی، میرے والدین مجھے بنگلہ دیش لے گئے اور وہاں زبردستی میری ایسے شخص سے شادی کروا دی جسے میں جانتی تک نہ تھی اور وہ مجھ سے عمر میں دو گنا بڑا تھا۔ شادی کے بعد وہ شخص کئی مہینے تک روزانہ مجھے جنسی زیادتی کا نشانہ بناتا رہا۔“روبی میری کا کہنا تھا کہ ”اس اذیت ناک صورتحال سے اس وقت میری جان چھوٹی جب میں حاملہ ہو گئی اور بچے کو جنم دینے کے لیے مجھے واپس برطانیہ لایا گیا۔ میرا شوہر اس لیے مجھے روزانہ جنسی زیادتی کا نشانہ بناتا تھا تاکہ وہ مجھے حاملہ کر سکے، کیونکہ یہی اس صورت میں وہ برطانیہ آ سکتا تھا۔وہ دور میرے لیے کسی خوفناک خواب جیسا ہے۔مجھے آج تک سمجھ نہیں آئی کہ میرے اپنے والدین نے میرے ساتھ ایسا کیوں کیا، کیوں انہوں نے مجھے ایسے شخص کے حوالے کر دیا جس نے میرے ساتھ جنسی غلام جیسا سلوک روا رکھا۔

Advertisement

x

We use cookies to give you the best online experience. By agreeing you accept the use of cookies in accordance with our cookie policy.

I accept I decline Privacy Center Privacy Settings