Advertisement

معصوم زینب کے ساتھ درندگی کی تمام حدیں پار، کیا، کیا ظالم ڈھائے گئ

Advertisements

سات سالہ زینب کی پوسٹ مارٹم رپورٹ سامنے آ گئی ہے۔ پوسٹ مارٹم رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ زینب کے قتل کرنے سے قبل بری طرح زیادتی کا نشانہ بنایا گیا، قصور کے ڈسٹرکٹ ہیڈ کوارٹر ہسپتال کی ایم ایل او نے بتایا کہ زینب کی موت گلا دبانے سے ہوئی، اس کے جسم کے نازک حصوں پر بھی نشانات تھے، اس بات کے بھی شواہد ملے ہیں کہ زینب کے ساتھ بری طرح زیادتی کی گئی ہے، زینب کا پوسٹ مارٹم منگل کوہی کر لیاگیا تھا، ہسپتال کی ایم ایل او نے کہا کہ زینب

کے جسم پر بھی تشدد کے نشانات تھے، اس کی زبان بھی بری طرح متاثر ہوئی تھی، جب اس کی لاش ملی اس کی زبان دانتوں میں دبی ہوئی تھی، اس کی گردن کی ہڈی بھی ٹوٹی ہوئی تھی۔ ایم ایل او نے کہا کہ زینب کی موت منگل سے دو تین روز قبل ہی ہو چکی تھی، سات سالہ زینب چار جنوری کو گھر سے گئی تو واپس نہ آ سکی، اغوا کاروں نے اسے دو یا تین روز اپنے پاس رکھا۔ ہسپتال کی ایم ایل او نے مزید کہا کہ زینب کے جسم سے اہم شواہد بھی حاصل کر لیے گئے ہیں، یہ شواہد لاہور بھجوا دیے گئے ہیں اور ان کی رپورٹ امید ہے کہ تین ماہ میں مل جائے گی۔ ایم ایم او نے اس موقع پر بتایا کہ گزشتہ سات ماہ کے دوران یہ اس نوعیت کا چوتھا واقعہ ہے ان چار کیسز میں صرف ایک بچہ زندہ بچ سکا ہے باقیوں کی موت ہو چکی ہے۔ پوسٹ مارٹم رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ زینب کے قتل کرنے سے قبل بری طرح زیادتی کا نشانہ بنایا گیا، قصور کے ڈسٹرکٹ ہیڈ کوارٹر ہسپتال کی ایم ایل او نے بتایا کہ زینب کی موت گلا دبانے سے ہوئی، اس کے جسم کے نازک حصوں پر بھی نشانات تھے، اس بات کے بھی شواہد ملے ہیں کہ زینب کے ساتھ بری طرح زیادتی کی گئی ہے، زینب کا پوسٹ مارٹم منگل کو ہی کر لیاگیا تھا، ہسپتال کی ایم ایل او نے کہا کہ زینب کے جسم پر بھی تشدد کے نشانات تھے، اس کی زبان بھی بری طرح متاثر ہوئی تھی، جب اس کی لاش ملی اس کی زبان دانتوں میں دبی ہوئی تھی، اس کی گردن کی ہڈی بھی ٹوٹی ہوئی تھی۔

Advertisement

Source Javedch.com
x

We use cookies to give you the best online experience. By agreeing you accept the use of cookies in accordance with our cookie policy.

I accept I decline Privacy Center Privacy Settings