Advertisement

قومی ٹیم میں کسی بھی ٹیم کو ہرانے کی صلاحیت موجود!! صرف کس چیز کی ضرورت ہے؟ فاسٹ باوٴلر عثمان شنوار ی نے اہم بات بتادی

Advertisements

قومی فاسٹ باﺅلر عثمان خان شنواری کا کہنا ہے کہ ورلڈ کپ میں قومی سکواڈ کسی بھی ٹیم کو ہرانے کی بھرپور صلاحیت رکھتا ہے اور سفید بال کی کرکٹ میں گرین شرٹس کو کسی بھی ٹیم سے کمتر نہیں کہا جا سکتا جن کی عالمی کرکٹ میں اپنی ایک اہمیت ہے۔ایک انٹرویو میں عثمان شنواری کا کہنا تھا کہ کرکٹ کے تینوں فارمیٹس میں بہت زیادہ فرق ہے اور دیکھا جائے تو قومی ٹیم کے پاس مختصر فارمیٹ کی کرکٹ کے لیے موثر بیٹسمین،عمدہ آل راﺅنڈرز اور بہترین فاسٹ باﺅلرز موجود ہیں۔


ان کا کہنا تھا کہ چیمپئنز ٹرافی کی فاتح ٹیم ورلڈ کپ میں بھی یہی کارنامہ دہرا سکتی ہے کیوں کہ انگلش کنڈیشنز میں کھیلنے کا اسے تجربہ بھی ہے۔ ایک سوال پر انہوں نے کہا کہ اس میں کوئی شک نہیں کہ رواں سال ہونے والا میگا ایونٹ آسان نہیں ہوگا اور انگلش میدانوں پر عالمی کرکٹ کی مضبوط ترین ٹیمیں ٹائٹل کے حصول کی جنگ لڑیں گی لیکن یقین ہے کہ دستیاب صلاحیت کے ساتھ پاکستانی ٹیم کوئی بھی سرپرائز کر سکتی ہے۔


آسٹریلین ایونٹ بگ بیش لیگ میں کھیلنے والے قومی پیسر کا کہنا تھا کہ جنوبی افریقہ کے خلاف حالیہ ٹیسٹ سیریز میں مایوس کن کارکردگی کی اہم ترین وجہ مشکل کنڈیشنز تھیں جن سے ہم آہنگی کیلئے پاکستانی کھلاڑیوں کو مناسب وقت بھی نہیں مل سکا جبکہ بعض پلیئرز کی انجریز کی وجہ سے بھی مشکلات میں اضافہ ہوا۔پروٹیز کے خلاف رواں ہفتے شروع ہونے والی ون ڈے سیریز کے لیے قومی ٹیم میں شامل عثمان شنواری کا کہنا تھا کہ مستقبل میں آسٹریلیا اور جنوبی افریقہ جیسی ٹیموں کا مقابلہ کرنے کیلئے پاکستان میں ڈومیسٹک کرکٹ کا ڈھانچہ تبدیل کرنا ہوگا جو کافی بہتر تو ہے لیکن اس میں بعض سہولیات ناپید ہیں جو آسٹریلیا سمیت دیگر ممالک میں پلیئرز کو فراہم کی جاتی ہیں۔ان کا کہنا تھا کہ بیرون ملک بہتر کارکردگی کے لیے ملکی کرکٹ کو مقابلے سے بھرپور بنانے کی ضرورت اب بہت زیادہ محسوس کی جا رہی ہے۔

Advertisement

x

We use cookies to give you the best online experience. By agreeing you accept the use of cookies in accordance with our cookie policy.

I accept I decline Privacy Center Privacy Settings