Advertisement

جھوٹے گواہوں اور ان پر فیصلے دینے والے ججز کو کیا سزا دی جائے گی؟ جسٹس آصف سعید کھوسہ نے آسیہ بی بی کیس فیصلے کے بعد بڑا اعلان کر دیا

Advertisements

سپریم کورٹ کے سینئر جج جسٹس آصف سعید خان کھوسہ نے کہا ہے کہ جلد جھوٹے گواہوں کو عمر قید کی سزائیں ہوں گی، جھوٹے گواہوں کو سزا دی تونظام درست ہوجائے گا، جھوٹی گواہی پر سزائیں دینے والے ججز سے بھی باز پرس ہوگی۔ انہوں نے آج یہاں گفتگو کرتے ہوئے واضح کیا کہ انشاء اللہ بہت جلد جھوٹے گواہوں کو سزائیں دیں جائیں گی۔
جھوٹے گواہوں کو سزا دی تونظام درست ہوجائے گا۔

جھوٹی گواہی دینے والوں کو جیل بھیجیں گے۔انہوں نے کہا کہ جھوٹی گواہی پر سزائیں دینے والے ججز سے بھی باز پرس ہوگی۔ انصاف نہ دینے والے ججز کو منصفی کی کرسی پر بیٹھنے کا کوئی حق نہیں ہے۔ جسٹس آصف سعید نے کہا کہ مقدمہ بریت کا ہوتا ہے اورٹرائل کورٹ عمر قید کی سزا سنا دے دیتی ہے۔ کیا صرف سپریم کورٹ کے ججز نے اللہ کو جواب دینا ہے۔انہوں نے ماتحت عدلیہ کے ججز کو مخاطب ہوتے ہوئے کہا کہ کیا ماتحت عدلیہ کے ججز نے اللہ کو جواب نہیں دینا۔ اگر ماتحت عدلیہ کے ججز نے یہی کچھ کرنا ہے توپھر انہیں بند کردیں۔

Advertisement

x

We use cookies to give you the best online experience. By agreeing you accept the use of cookies in accordance with our cookie policy.

I accept I decline Privacy Center Privacy Settings