Advertisement

تقریب حلف برداری میں غیر ملکی مہمانوں سمیت شرکاء کی تواضع کس چیز سے کی جائے گی؟

Advertisements

قومی اخبار کی ایک رپورٹ کے مطابق تحریک انصاف کے نامزد وزیراعظم عمران خان نے حلف برداری کو انتہائی سادہ رکھنے کے لیے گارڈ آف آنرز نہ لینے پر غور کرنا شروع کر دیا یے۔غیر ملکی مہمانوں سمیت تقریب کے دیگر شرکاء کی خاطر تواضع صرف چائے کی پیالی سے کی جائے گی۔۔عمران خان خاموشی اور سادگی سے وزیراعظم کا عہدہ سنبھال لیں گے۔انہوں نے کارکنوں کو بھی ہدایت کی ہے کہ تقریب حلف برادری کے موقع پر ملک بھر میں کوئی بڑے جشن ، تقریبات ، ہوائی فائرنگ اور آتش بازی کا مظاہرہ نہیں کیا جائے کا

۔اس موقع پر اللہ کا شکر بھی ادا کیا جائے گا۔ذرائع سے معلوم ہوا ہے کہ عمران خان نے بطور وزیراعظم حلف برداری کی تقریب کو انتہائی سادہ رکھنے کا فیصلہ کیا ہے۔حتی کہ گارڈ آف آنرز بھی نہ لینے کا فیصلہ کیا ہے۔سربراہ تحریک انصاف اسے فضول خرچی اور قومی خزانہ پر بوجھ سمجھتے ہیں۔یہ بھی معلوم ہوا ہے کہ عمران خان نے ہدایت کی ہے کہ غیر ملکی مہمانوں سمیت دیگر شرکاء کی خاطر تواضع کے لیے کوئی خاص اہتمام نہ کیا جائے۔یاد رہے پاکستان تحریک انصاف کے چیئر مین عمران خان کی بطور 19ویں وزیراعظم حلف برداری کی تقریب 18 اگست کو ہونے کا امکان ہے جس کے لیے مہمانوں کو دعوت نامے جاری کیے جانے کا سلسلہ جاری ہے۔تحریک انصاف کے سینیٹر فیصل جاوید نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ عمران خان نے بطور وزیراعظم اپنی تقریب حلف برداری میں تین سابق بھارتی کھلاڑیوں کو بھی مدعو کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ واضح رہے کہ قومی اسمبلی میں پاکستان تحریک انصاف(((پی ٹی آئی ) 115 نشستیں جیت کر ایوان زیریں کی سب سے بڑی جماعت بن کر سامنے آئی ہے، پاکستانمسلم لیگ (ن) 64 نشستوں کے ساتھ دوسری جب کہ پاکستان پیپلز پارٹی((پی پی پی ) 43 سیٹوں کے ساتھ تیسری بڑی جماعت بن کر ابھری ہے، متحدہ مجلس عمل(((ایم ایم اے ) کی قومی اسمبلی میں 12،،،پاکستان مسلم لیگ (ق)5، ایم کیو ایم پاکستان 6 ، گرینڈ ڈیموکریٹک الائنس(جی ڈی اے) 2 جب کہ عوامی مسلم لیگ، پاکستان تحریک انسانیت، عوامی نیشنل پارٹی((اے این پی)) اوربلوچستان نیشنل پارٹی (بی این پی) کا ایک، ایک امیدوار کامیاب ہوا ہے، دوسری جانب 12 آزاد امیدوار قومی اسمبلی کے رکن منتخب ہوئے ہیں۔

قومی اخبار کی ایک رپورٹ کے مطابق تحریک انصاف کے نامزد وزیراعظم عمران خان نے حلف برداری کو انتہائی سادہ رکھنے کے لیے گارڈ آف آنرز نہ لینے پر غور کرنا شروع کر دیا یے۔غیر ملکی مہمانوں سمیت تقریب کے دیگر شرکاء کی خاطر تواضع صرف چائے کی پیالی سے کی جائے گی۔۔عمران خان خاموشی اور سادگی سے وزیراعظم کا عہدہ سنبھال لیں گے۔انہوں نے کارکنوں کو بھی ہدایت کی ہے کہ تقریب حلف برادری کے موقع پر ملک بھر میں کوئی بڑے جشن ، تقریبات ، ہوائی فائرنگ اور آتش بازی کا مظاہرہ نہیں کیا جائے کا۔اس موقع پر اللہ کا شکر بھی ادا کیا جائے گا۔ذرائع سے معلوم ہوا ہے کہ عمران خان نے بطور وزیراعظم حلف برداری کی تقریب کو انتہائی سادہ رکھنے کا فیصلہ کیا ہے۔حتی کہ گارڈ آف آنرز بھی نہ لینے کا فیصلہ کیا ہے۔سربراہ تحریک انصاف اسے فضول خرچی اور قومی خزانہ پر بوجھ سمجھتے ہیں۔یہ بھی معلوم ہوا ہے کہ عمران خان نے ہدایت کی ہے کہ غیر ملکی مہمانوں سمیت دیگر شرکاء کی خاطر تواضع کے لیے کوئی خاص اہتمام نہ کیا جائے۔یاد رہے پاکستان تحریک انصاف کے چیئر مین عمران خان کی بطور 19ویں وزیراعظم حلف برداری کی تقریب 18 اگست کو ہونے کا امکان ہے جس کے لیے مہمانوں کو دعوت نامے جاری کیے جانے کا سلسلہ جاری ہے۔تحریک انصاف کے سینیٹر فیصل جاوید نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ عمران خان نے بطور وزیراعظم اپنی تقریب حلف برداری میں تین سابق بھارتی کھلاڑیوں کو بھی مدعو کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ واضح رہے کہ قومی اسمبلی میں پاکستان تحریک انصاف(((پی ٹی آئی ) 115 نشستیں جیت کر ایوان زیریں کی سب سے بڑی جماعت بن کر سامنے آئی ہے، پاکستانمسلم لیگ (ن) 64 نشستوں کے ساتھ دوسری جب کہ پاکستان پیپلز پارٹی((پی پی پی ) 43 سیٹوں کے ساتھ تیسری بڑی جماعت بن کر ابھری ہے، متحدہ مجلس عمل(((ایم ایم اے ) کی قومی اسمبلی میں 12،،،پاکستان مسلم لیگ (ق)5، ایم کیو ایم پاکستان 6 ، گرینڈ ڈیموکریٹک الائنس(جی ڈی اے) 2 جب کہ عوامی مسلم لیگ، پاکستان تحریک انسانیت، عوامی نیشنل پارٹی((اے این پی)) اوربلوچستان نیشنل پارٹی (بی این پی) کا ایک، ایک امیدوار کامیاب ہوا ہے، دوسری جانب 12 آزاد امیدوار قومی اسمبلی کے رکن منتخب ہوئے ہیں۔

Advertisement

x

We use cookies to give you the best online experience. By agreeing you accept the use of cookies in accordance with our cookie policy.

I accept I decline Privacy Center Privacy Settings