بھارت پاکستان میں پھنسے اپنے ہی شہریوں کو واپس بلانے سے گریز کرنے لگا, پاکستان میں مقیم اپنے شہریوں کی واپسی کیلئے بھارت کا کوئی اقدام نظر نہیں آرہا۔ تفصیلات کے پاکستان میں پھنسے بھارتی شہریوں نے اپنی حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ بھارت واپسی کیلئے کلیئرنس جاری کرے۔ کئی بھارتی شہریوں کے پاس تو ادویات کے پیسے بھی ختم ہو چکے ہیں۔لاہور کے علاقے سبزہ زار میں مقیم بھارتی شہری سنتوک سنگھ نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ وہ رشتہ دار کی شادی میں شرکت کیلئے 10 مارچ کو پاکستان آیا تھا اور

اور خیر پور میں شادی میں شرکت کی۔ 30 دن کے ویزہ تھا تاہم 18 مارچ کو وطن واپسی کیلئے میں خیرپور سے لاہور مگر معلوم ہوا کہ واہگہ بارڈر کو سیل کردیا گیا ہے۔بھارتی سفارتخانے سے رابطہ کرنے پر انہوں نے کوئی تسلی بخش جواب نہیں دیا۔بھارتی حکومت شہریوں کو واپس لے جانے سے گریز کررہی ہے۔ یہ بات بھی قابل غور رہے کہ پاکستان سمیت دنیا بھر میں اب اپنے شہریوں کی وطن واپسی شروع کر دی گئی ہے۔ تاہم بھارتی حکومت اپنے کی شہریوں کو پاکستان سے واپس بلانے سے گریز کررہا ہے۔ یاد رہے اس سے قبل کورونا وبا کے باعث دنیا بھر میں فلائیٹ آپریشن معطل کر دیا گیا تھا۔ تاہم اب شہریوں کی واپسی کا سلسلہ شروع کر دیا گیا۔بھارت کورونا وائرس سے متاثر ہونے والا ایشیا کا تیسرا بڑا ملک بن گیا، بھارت میں کرونا وائرس کا انتہائی تیزی سے پھیلائو، ایک دن میں ریکارڈ 5611 کیسز ، متاثرین کی مجموعی تعداد 106750 تک پہنچ گئی۔ تفصیلات کے مطابق بھارت میں مہلک کورونا وائرس انتہائی تیزی سے پھیل رہا ہے اور ایک دن میں ریکارڈ 5611 کیسز سامنے آنے کے بعد ملک بھر میں متاثرین کی مجموعی تعداد 106750 تک پہنچ گئی ہے۔