Advertisement

’’آخر مسلمان روزہ کیوں رکھتے ہیں ؟ ‘‘ غیر مسلموں نے جب اس پر تحقیق کی توکیا پتہ چلا وہ بھی اللہ پاک کی اس نعمت پر حیران رہ گئے

Advertisements

ماہرین طب نے کہا ہے کہ روزہ رکھنے سے روحانی تسکین کے علاوہ جسمانی صحت پر بھی مثبت اثرات مرتب ہوتے ہیں. روزہ شوگر لیول ،کولیسٹرول اوربلڈ پریشر اعتدالمیں لاتا ہے۔اولاد سے محروم و موٹاپے کا شکار خواتین روزے ضرور رکھیں.اس امر کا اظہار مرکزی سیکرٹری جنرل کونسل آف ہربل فزیشنز پاکستان اور معروف یونانی میڈیکل آفیسر حکیم قاضی ایم اے خالد نے ماہ صیام کی آمد کے موقع پرکونسل کے زیراہتمام ایک مجلس مذاکرہ بعنوان’’روزہ اور جدید سائنس‘‘ سے خطاب کرتے ہوئے کیا .انہوں نے کہا کہ روزہ انسانی جسم سے فضلات اور تیزابی مادوں کا اخراج کرتا ہے. روزہ رکھنے سے دماغی خلیات بھی فاضل مادوں سے نجات پاتے ہیںجس سے نہ صرف نفسیاتی و روحانی امراض کا خاتمہ ہوتا ہے بلکہ اس سے دماغی صلاحیتوں کو جلامل کر انسانی صلاحیتیں بھی اجاگر ہوتی ہیں.وہ خواتین جواولاد کی نعمت سے محروم ہیں اور موٹاپے کا شکار ہیں وہ ضرور روزے رکھیں تاکہ ان کا وزن کم ہوسکے .انھوں نے کہا کہ افطاری کے وقت زیادہ ثقیل، مرغن اور تلی ہوئی اشیاء مثلا ًسموسے‘ پکوڑے اورکچوری وغیرہ کے کثرت سے استعمال سے معدہ خراب ہوجاتا ہے

لہذا افطار کسی پھل یا کھجور سے کیا جائے.ان کا کہنا تھا کہ روزہ رکھنے سے جسم میں خون بننے کا عمل تیز ہوجاتا ہے اور جسم کی تطہیر ہوجاتی ہے.افطار میں پانی دودھ یا کوئی بھی مشروب ایک ہی مرتبہ زیادہ مقدار میں استعمال کرنے کی بجائے وقفے وقفے سے استعمال کریں.

Advertisement

Source dailyausaf.com
x

We use cookies to give you the best online experience. By agreeing you accept the use of cookies in accordance with our cookie policy.

I accept I decline Privacy Center Privacy Settings